پٹرولیم ڈویژن کی مطالبات پر مذاکرات کی یقین دہانی، آئل ٹینکرز ایسوسی ایشن نے ہڑتال ملتوی کر دی 

پٹرولیم ڈویژن کی مطالبات پر مذاکرات کی یقین دہانی، آئل ٹینکرز ایسوسی ایشن نے ...

  

اسلام آباد، کراچی (سٹاف رپورٹرز،نیوز ایجنسیاں) آل پاکستان آئل ٹینکرز ایسو سی ایشن کی جانب سے اعلانیہ ہڑتال اور اسکے نتیجے میں ممکنہ پٹرول بحران کے خطرے کو مد نظر رکھتے ہو ئے پٹرولیم ڈویژن نے ایسوسی ایشن سے رابطہ کیا اور انہیں جائز مطالبات متعلقہ اداروں تک پہنچانے کی یقین دہانی کرادی۔ آئل ٹینکرز ا یسو سی ایشن نے پٹرولیم ڈویژن کے رابطے کے بعد ہڑتال ملتوی کردی۔ اسی سلسلے میں 20 جولائی بروز پیر کو آئل ٹینکرز ایسو سی ایشن کا وفد پٹرولیم ڈویژن میں ملاقات کریگا اورمطالبات و مسائل پر بات چیت ہو گی۔ پٹرولیم ڈویژن حکام کا کہنا تھا وہ اپنی قومی ذمہ داری کے تحت پٹرول و پٹرولیم مصنوعات کی ترسیل کو یقینی بنانے کیلئے کوشاں رہیں گے اور یہ مسئلہ خوش اسلوبی سے حل کرلیا جائیگا۔واضح رہے آئل ٹینکر کنٹریکٹرز ایسوسی ایشنز کی ہڑتال کے باعث ملک بھر میں تیل کی ترسیل مکمل طور پر بندہے۔آئل ٹینکرز کنٹریکٹرز گزشتہ روز سے ہڑتال پر ہے، صدر آئل ٹینکرز کنٹریکٹرز ایسوسی ایشن کا کہنا تھا کہ ہمارے مسائل حل نہیں ہورہے، ملک بھر میں تیل کی ترسیل مکمل بندکی جارہی ہے، انکم ٹیکس میں اضافہ کسی صورت منظور نہیں ہے۔کنٹریکٹرز کے مطابق کرونا صورتحال میں انکم ٹیکس کو 3 فیصد کردیا ہے، یکم جولائی 2020ء سے لگائے گئے ٹول ٹیکس کو واپس لیا جائے، وائٹ آئل پائپ لائن کے آنے کے بعد ہمیں اس میں سرمایہ کاری سمیت کاروبار کی اجازت دی جائے، کمرشل لوڈنگ کو فی الفور بند کیا جائے۔ان کا یہ بھی مطالبہ ہے کہ پرانے طرز کی گاڑیوں کے حوالے سے پالیسی واضح کی جائے۔

آئل ٹینکرز ہڑتال

مزید :

ملتان صفحہ آخر -