وہ ملک جس نے امریکی فوجیوں سے کورونا ٹیسٹ کروانے کی درخواست کردی

وہ ملک جس نے امریکی فوجیوں سے کورونا ٹیسٹ کروانے کی درخواست کردی
وہ ملک جس نے امریکی فوجیوں سے کورونا ٹیسٹ کروانے کی درخواست کردی

  

ٹوکیو(ڈیلی پاکستان آن لائن)دنیا بھرمیں کورونا وائرس کے پھیلاو کا سلسلہ جاری ہے۔ اب تک عالمی سطح پر  متاثرہ افراد کی تعداد ایک کروڑ 40 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے جبکہ اب تک اس مرض کے باعث چھ لاکھ سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

کورونا کے اس پھیلاو سے پریشان عالمی برادری مختلف حفاظتی اقدامات اٹھارہی ہے، ایسی ہی ایک احتیاطی کارروائی کے تحت  جاپان نے اپنے ملک میں موجود امریکی فوجی اڈوں پر تعینات فوجیوں سے ددرخواست کی ہے کہ وہ اپنے اپنے کورونا ٹیسٹ کروائیں۔

بی بی سی کے مطابق جاپان کے وزیرِ دفاع تارو کونو نے جاپان آنے والے امریکی فوجیوں سے کورونا وائرس ٹیسٹ کروانے کی درخواست کی ہے کیونکہ اوکیناوا جزیرے پر کورونا وائرس کے پھیلاؤ میں اضافہ ہوا ہے۔

کونو کے مطابق امریکہ میں اس وقت صرف ان لوگوں کے ٹیسٹ کیے جا رہے ہیں جن میں علامات ظاہر ہو رہی ہیں تاہم وہ اس درخواست پر غور کر رہے ہیں۔

جمعرات تک اوکیناوا جزیرے پر کل 138 فوجیوں میں کورونا وائرس کی تشخیص ہو چکی تھی اور یہ وہی جزیرہ ہے جہاں امریکی فوجیوں کی بڑی تعداد موجود ہے۔

گزشتہ ہفتے اوکیناوا کے گورنر ڈینی ٹماکی نے رپورٹرز کو بتایا کہ ’مجھے امریکی فوجیوں کی جانب سے وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے حوالے سے لیے جانے والے اقدامات پر شک کرنا پڑ رہا ہے۔‘

انھوں نے دعویٰ کیا کہ امریکی فوجیوں نے چار جولائی کو فوجی اڈے سے باہر جا کر پارٹیز میں گئے اور مقامی نائٹ لائف علاقوں میں بھی گئے۔

اوکیناوا کے مقامی لوگوں اور امریکی فورسز کے درمیان تناؤ کی کیفیت رہی ہے۔ مقامی افراد فوجیوں کی منتقلی کے بارے میں ایک عرصے سے احتجاج کر رہے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -