پنجاب کا نیا وزیراعلیٰ کہاں سے ہو گا ؟ سینئر صحافی سہیل وڑائچ نے بڑا دعویٰ کر دیا

پنجاب کا نیا وزیراعلیٰ کہاں سے ہو گا ؟ سینئر صحافی سہیل وڑائچ نے بڑا دعویٰ کر ...
پنجاب کا نیا وزیراعلیٰ کہاں سے ہو گا ؟ سینئر صحافی سہیل وڑائچ نے بڑا دعویٰ کر دیا

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن )سینئر صحافی و تجزیہ کار سہیل وڑائچ نے کہاہے کہ نیا وزیراعلیٰ پنجاب تحریک انصاف کے اندر سے ہی آئے گا،

نجی ٹی وی جیونیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سینئر تجزیہ کار سہیل وڑائچ نے کہا کہ وفاق کی طرف سے وزیراعلیٰ پنجاب کی تبدیلی کی خبریں مسترد کرنے میں اب اتنا وزن نہیں جتنا پہلے ہوتاتھا، میری اطلاع کے مطابق عثمان بزدار کا متبادل ڈھونڈا جارہا ہے۔پنجاب میں تبدیلی کے بارے میں میٹنگیں ہوئی اور ہورہی ہیں، بعض متبادل ٹائپ امیدواروں کی انٹرویو ٹائپ ملاقاتیں بھی ہوئی ہیں، عمران خان کی مرضی سے پنجاب میں تبدیلی آرہی ہے، وزیراعظم کو احساس ہوگیا ہے کہ وزیراعلیٰ کیلئے وفادار ہونے کے ساتھ کارکردگی دکھانا بھی ضروری ہے، نیا وزیراعلیٰ پنجاب تحریک انصاف کے اندر سے ہی آئے گا۔

انہوں نے کہا کہ چار پانچ ناموں پربات ہورہی ہے جبکہ چند لوگوں سے ملاقاتیں بھی ہوئی ہے، عمران خان عثمان بزدار کی اتنی تعریفیں کرچکے ہیں کہ انہیں باعزت طریقے سے کوئی اورذمہ داری دینی چاہئے۔

نجی ٹی وی کے پروگرام میں شریک ماہر اجناس شمس الاسلام خان نے کہا کہ پچھلے سال آٹا 37روپے 50روپے فی کلو سے بڑھ کر 75روپے فی کلو ہوگیا تھا جس سے گندم کے کارٹل نے بہت بڑا منافع کمایا تھا۔گندم کی کم فصل ہونے سے ذخیرہ اندوزوں کو ایک دفعہ پھر بحران پیدا کرنے کا موقع ملا، پچھلے سال گندم بحران پر کمیشن رپورٹ پر کوئی ایکشن نہیں ہوا جس نے مافیا کو حوصلہ دیا۔ شمس الاسلام خان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کی گندم درآمد کرنے کی ہدایات پر بھی مجرمانہ غفلت برتی گئی۔

مزید :

قومی -