پرچہ رجسٹری فیس کی آڑ میں رشوت وصولی بند کروائی جائے سائلوں کا مطالبہ

پرچہ رجسٹری فیس کی آڑ میں رشوت وصولی بند کروائی جائے سائلوں کا مطالبہ ...

  



                                                   لاہور (عامر بٹ سے) ضلع لاہور کے محکمہ ریونیو کی دفتر قانگو برانچوں میں تعینات اہلکاروں کا پٹواریوں سے گٹھ جوڑ، 500 روپے فیس انتقال وصول کرنے کے باوجود عوام الناس سے رشوت وصولی کی مد میں سالانہ 15 کروڑ سے زائد رقوم پٹواری مافیا ہتھیانے لگا تحصیلوں میں پرچہ رجسٹری کو ڈیل کرنے والا سٹاف بوگس تکمیلیں بنا بنا کر اعلیٰ افسران کو گمراہ کرنے لگا ڈی جی اینٹی کرپشن پنجاب سے پرچہ رجسٹری کی آڑ میں کی جانے والی کرپشن کا نوٹس لینے کی اپیل کی گئی ہے مزید معلوم ہوا ہے کہ صوبائی دارالحکومت میں رجسٹریاں پاس کرنے کے دوران سب رجسٹرار رجسٹریشن برانچوں کا سٹاف عوام سے 500 روپے وصول کرنے میں مصروف ہے جس میں سے رجسٹریشن برانچ کی جانب سے 300 روپے بنکوں میں جمع کروا دیا جاتا ہے اور 200 روپے فی رجسٹری عملہ دفتر قانونگو برانچوں کو دیدیا جاتا ہے جس کے بعد وہ قانوناً عوام الناس کو 15 دنوں کے اندر پرچہ رجسٹری قانون کے مطابق انتقالات کی تصدیق شدہ کاپیاں مہیا کرنے کا پابند ہے مگر محکمہ مال کی انتظامی سیٹوں پر براجمان اعلیٰ افسران سمیت بورڈ آف ریونیو کے گریڈ 20 تک کے تمام افسران کی موجودگی بھی اس قانون پر عمل درآمد کروانے میں تاحال ناکام ہو چکی ہے ضلع لاہور میں دفتر قانونگو برانچوں میں تعینات سٹاف فی رجسٹری کے ساتھ ملنے والی 200 روپے کی رقوم اپنی ذاتی جیبوں میں ڈال رہے ہیں ضلع کچہری میں آنیوالے سائلین مخدوم علی شاہ، اکبر علی، وقاص بٹ، چوہدری اکرم، لیاقت بھٹی، محسن علی اور ذیشان عاطف نے روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے الزام عائد کیا ہے کہ دفتر قانونگو برانچوں میں تعینات سٹاف پٹواریوں کی کرپشن پر پردہ ڈالتے ہوئے ان سے حصہ وصول کر رہا ہے جھوٹ پر مبنی رپورٹیں تیار کی جا رہی ہیں دفتر قانونگو برانچ میں تعینات سٹاف اور پٹواریوں سے باوضو ہو کر حلف اٹھایا جائے تو دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے گا پرچہ رجسٹری کے متعلق جتنی بھی رپورٹس تیار کی گئی ہیں وہ تمام بوگس اور جعلی ہیں اگر ڈائریکٹر اینٹی کرپشن پرچہ رجسٹری سے متعلق رپورٹس منگوا کر چھان بین کریں تو ان کے فراڈ اور جعلسازی کی حقیقت عیاں ہو جائے گی ہماری اپیل ہے کہ اینٹی کرپشن کے ڈائریکٹر پرچہ رجسٹری کے متعلق ریکارڈ منگوا کر اس معاملے کی تحقیقات کریں کیونکہ پرچہ رجسٹری کی آڑ میں سائلین سے روزانہ لاکھوں روپے رشوت وصول کی جا رہی ہے

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...