نیشنل سکیورٹی ایجنسی نے 2012 میں لاکھوں کی تعداد میں ٹیلی فون کالز کا ریکارڈ اکٹھا کیا ¾رپورٹ

نیشنل سکیورٹی ایجنسی نے 2012 میں لاکھوں کی تعداد میں ٹیلی فون کالز کا ریکارڈ ...

  



                    واشنگٹن(این این آئی) نیشنل سکیورٹی ایجنسی (این ایس اے)نے 2012 میں لاکھوں کی تعداد میں ٹیلی فون کالز کا ریکارڈ اکٹھا کیاجس میں سے حکومت ِامریکہ نے صرف 300مخصوص فون نمبروں کی تفصیلی چھان بین کی تھی۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق موصول ہونے والی ایک سرکاری دستاویز میں بتایا گیا کہ خفیہ قرار دی گئی یہ دستاویز حکومت نے امریکی خفیہ اداروں کو جاری کی تھی جس کا مقصد بظاہر یہ لگتا ہے کہ خفیہ اداروں اور اوباما انتظامیہ اس سلسلے میں لگنے والے الزامات کا توڑ کر سکیں۔

 اور یہ بات نہیں کہ امکانی پرتشدد سازشوں کی تفتیش کرتے ہوئے، کسی طور پر حد سے تجاوز کا ارتکاب ہوا۔ دستاویز میں بتایا گیا کہ این ایس اے کی طرف سے اِی میل اور ٹیلی فون ڈیٹا کی مدد سے امریکی حکام نے ایک افغان تارک وطن، نجیب اللہ زازی کا پتا لگایا، جسے 2009 میں نیو یارک سٹی کے سب وے نظام کو بم سے اڑانے کی سازش کے الزام میں گرفتار کیا گیا۔

مزید : عالمی منظر