مزدور کی کم از کم تنخواہ 10 ہزار کے فیصلے پر عمل کروائیں گے، وزیر محنت

مزدور کی کم از کم تنخواہ 10 ہزار کے فیصلے پر عمل کروائیں گے، وزیر محنت

  



                    لاہور(رپورٹنگ ٹیم) پنجاب کے وزیر محنت راجہ اشفاق سرور نے کہا ہے کہ حکومت کی جانب سے مزدور کی کم از کم تنخواہ 10ہزار کرنے کے فیصلے پر سختی سے عملدرآمد کروایا جائے گااور مزدور کو مقررہ تنخواہ نہ دینے والے فیکٹریوں اور دیگر اداروں کو جرمانوں کے علاوہ سیل بھی کیا جائے گا۔ بجٹ اجلاس کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ (ن) لیگ اپنے وعدے کے مطابق مزدور کی کم ازکم تنخواہ 15ہزار ضرور کرے گی لیکن ہم نے یہ بھی کہا تھا کہ ہم اپنے پانچ سالہ دور میں اس وعدے کو مکمل کریں گے اور انشاءاللہ آنےوالے بجٹ میں مزدور کی تنخواہ میں مزید اضافہ کیا جائےگا۔ ایک سوال کے جواب میں اُ ن کا کہنا تھا کہ پنجاب حکومت مزدور کی کم ازکم تنخواہ کے حوالے سے اعلان پر مکمل عملدرآمد کروائے گی اور جہاں بھی اس کی خلاف ورزی ہو گی وہاں پر نہ صرف فیکٹریوں اور دیگر مقامات کو سیل کیا جائے گا بلکہ ان کو جرمانے اور سزائیں بھی دی جائیں گی۔

مزید : صفحہ اول