ڈی آ ؑئی جی انوےسٹی گےشن سمےت لا ہورپولےس کے بےالےس افسروں کے تقررو تبادلے کی فہرست تےار

ڈی آ ؑئی جی انوےسٹی گےشن سمےت لا ہورپولےس کے بےالےس افسروں کے تقررو تبادلے کی ...

  



                                                     لاہور(زاہد علی خان) لاہور پولیس میں افسران کے تقرر وتبادلوں کے لئے ایک فہرست تیار کی جارہی ہے ذرائع نے بتایا ہے کہ ڈی آئی جی انویسٹی گیشن سمیت لاہور پولیس کے 42 افسروں کو تبدیل کیا جاسکتا ہے۔ پرانے افسروں کو دوبارہ تعینات کرنے کے لئے آئی جی پولیس نے خصوصی طور پر رضا مندی ظاہرکردی ہے۔ بتایاگیا ہے کہ موجودہ افسر جرائم کنٹرول کرنے میں ناکام ہوگئے ہیں خاص طور پر کار چوری کی وارداتیں، سٹریٹ کرائم اور دیگر سنگین نوعیت کے مقدمات بڑھ گئے ہیں۔ باخبر ذرائع نے بتایا ہے کہ سی سی پی او لاہور اور ڈی آئی جی آپریشنز کی تعیناتی کے بعد موجودہ پولیس افسروں کی ایک بڑی تعداد طویل رخصت پر چلی گئی ہے۔ ان میں سابق ڈی آئی جی آپریشن جواد ڈوگر سرفہرست ہیں جبکہ ان سے قبل سابق سی سی پی او لاہور خالق داد لک نے بھی اچانک چارج چھوڑ دیاتھا۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ پنجاب کی موجودہ انتظامیہ ایسے افسران کا تقرر کرنا چاہتے ہیں جو لاہور کے مزاج سے واقف ہیں اور بعض افسران کی کارکردگی بہتر رہی ذرائع نے مزید بتایا کہ ڈی آئی جی انویسٹی گیشن ذوالفقار حمیداور ایس ایس پی انویسٹی گیشن عبدالتراب کوتبدیل کیاجارہا ہے سابق ایس ایس پی انویسٹی گیشن بابر بخت قریشی اور ایس ایس پی سجاد منج میں سے کسی ایک کو ایس ایس پی انویسٹی گیشن تعینات کیاجائے گا اس طرح ایس ایس پی آپریشن کے لئے بھی 4 افسران کے نام سامنے آئے ہیں ۔ ان میں ڈی پی او شیخوپورہ احسن یونس، سی پی او فیصل آباد راجہ رفعت مختار کے نام زیر غور ہیں۔ بتایاگیا ہے کہ ایس پی سی آئی اے لاہور حاجی خالد مسعود کی جگہ عمر ورک کو دوبارہ تعینات کیاجائے گا ۔ چار ڈویژنوں کے ایس پی اور ایس پی انویسٹی گیشن بھی تبدیل ہورہے ہیں جبکہ ڈی ایس پی کا سٹاف گلبرگ سمیت کسی ڈی ایس پی کو دوبارہ ان سیٹوں پر تعینات کیاجائے گا سہیل اختر سکھیرا کو ایس ایس پی ڈسپلن تعینات کیاجارہا ہے اس طرح لاہور کے اہم سرکلز میں بھی ڈی ایس پی تبدیل کرنے کے لئے فہرست تیار کی جارہی ہے۔-

مزید : صفحہ آخر


loading...