عام انٹخابات میں سرائیکی صوبے کا ناٹک رچانے والوں کا صفائیا ہو گا

عام انٹخابات میں سرائیکی صوبے کا ناٹک رچانے والوں کا صفائیا ہو گا

  



              لاہور (رپورٹنگ ٹیم) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی زیرصدارت پنجاب کابینہ کا اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں صوبائی میزانیہ برائے مالی سال 2013-14 کی باضابطہ منظوری دی گئی- اجلاس نے مالیاتی بل اور صوبائی میزانیہ برائے مالی سال 2012-13 کے نظرثانی شدہ تخمینہ جات کی بھی منظوری دی-اجلاس میںترقیاتی اخراجات برائے مالی سال 2013-14اورنظر ثانی شدہ ترقیاتی بجٹ 2012-13کی بھی منظوری دی گئی۔ سیکرٹری خزانہ طارق باجوہ نے کابینہ کو صوبائی میزانیہ 2013-14 کے نمایاں خد و خال سے آگاہ کیا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ شہبازشریف نے کہاکہ پنجاب کے مالی سال 2013-14ءکے بجٹ صوبے میں ترقی وخوشحالی کا نیا دور شروع ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ عوام کی فلاح وبہبود کے لئے شروع کئے جانے والے منصوبوں پر بلاتاخیر عملدرآمد کیاجائے گا۔انہوں نے کہاکہ صوبے میں ٹیکس جمع کرنے کا بہت زیادہ پوٹینشل موجود ہے ہمیں ٹیکس کا دائرہ کار وسیع کرنا ہے اور ٹیکس چوری کا راستہ روکنا ہے ۔انہوںنے کہاکہ ٹیکس جمع کرنے والی مشینری کو درست کرناہے کیونکہ ٹیکس کا پیسہ قوم کی امانت ہے اور قوم کا پیسہ کسی کی ذاتی جیب میں نہیں جانے دیں گے۔ انہوںنے کہاکہ ٹیکس نظام میں اصلاحات کے لئے انقلابی اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ پنجاب حکومت صوبے میں عادلانہ اور منصفانہ نظام کے لئے ٹھوس حکمت عملی پر عمل پیرا ہوگی۔ غریب اور محروم طبقات پر کسی قسم کا ٹیکس نہیں لگایاگیا بلکہ اشرافیہ اور امراءپر ٹیکس لگایا گیا ہے۔ دریں اثناءوزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کو عوامی خدمت کی بدولت تاریخی مینڈیٹ ملا ہے۔ سرائیکی اور علیحدہ صوبہ بنانے کا ناٹک رچانے والوں کا عام انتخابات میں صفایا ہوگیا ہے۔ جنوبی پنجاب میں بھی پاکستان مسلم لیگ (ن) کو تاریخ کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ عوام نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کی قیادت اور پالیسیوں پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے توانائی بحران کرپشن غربت بے روزگاری اور مسائل سے نجات دلانے کا مینڈیٹ دیا ہے۔ ہم اپنی ٹھوس معاشی پالیسیوں کے ذریعے یہ انقلاب برپا کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈیرہ غازی خان ڈویژن سے تعلق رکھنے والے ارکان اسمبلی سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ وزیر اعلیٰ شہباز شریف نے اراکین اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امن وامان کا قیام اور عوام کو انصاف کی فراہمی ہماری سرفہرست ترجیحات ہیں۔ تھانہ کلچر میں تبدیلی لائیں گے عوام کو پٹواری اور تحصیلدار کے استحصال سے نجات دلائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ 500 نئے سب انسپکٹر میرٹ پر پبلک سروس کمیشن کے ذریعے بھرتی کئے جائیں گے۔ انہیں خصوصی تربیت کے بعد ایلیٹ سکول میں بھی تربیت دلائی جائے گی۔ پھر انہیں مختلف تھانوں میں تعینات کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ پولیس فورس میں نیا خون شامل کرکے اس کی استعداد کار بڑھائی جائے گی۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ سادگی اور کفایت شعاری کی پالیسی پر سختی سے عملدرآمد کیا جائے گا۔ وزیر اعلیٰ آفس کے اخراجات میں 30 فیصد کمی کی جارہی ہے، نئی گاڑیاں خریدنے پر پابندی برقرار رہے گی۔ انہوں نے کہا کہ میڈیا اور سول سوسائٹی کی نظریں ہم پر لگی ہیں ہمیں ہر صورت کارکردگی کارکردگی دکھانا ہے۔ عوام بجلی کے بحران سمیت تمام مسائل سے نجات چاہتے ہیں اور ہمیں اس جانب تیزی سے آگے بڑھنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت بجلی چوری کے خاتمے میں اپنا بھرپور کردار ادا کرے گی۔

شہباز شریف

مزید : صفحہ اول


loading...