ہماری بھی عزت نفس ہے، اسمبلی کے باہر دھرنا دیں گے، بس ہوسٹس

ہماری بھی عزت نفس ہے، اسمبلی کے باہر دھرنا دیں گے، بس ہوسٹس

  



                لاہور(دیبا مرزا+تصاویر ذیشان منیر)ممتاز سفری اداروں کی بس ہوسٹس نے ایم اپی اے نگہت چودھری کی طرف سے بس ہوسٹس اقراءرﺅف کو تشدد کے بعد جھوٹا مقدمہ درج کروانے کے واقعہ کو انسانیت کی تذلیل قرار دیا ہے اور مطالبہ کیا ہے کہ مذکورہ رکن صوبائی اسمبلی کو گرفتار کر کے قرار واقعی سزا دی جائے بصورت دیگر میزبان خواتین کام چھوڑ کر ہڑتال کر دیں گی اور پنجاب اسمبلی کے سامنے بھوک ہڑتال بھی کی جائے گی۔ گزشتہ روز روزنامہ پاکستان طرف سے کئے گئے سروے کے دوران مختلف اداروں کی بس ہوسٹز نے اس واقعہ کو انتہائی افسوس ناک قرار دیا مصباح بشیر نے کہا ہے کہ ایم پی اے نے ہماری غربت کا مذاق اڑایا ہے ہماری بھی عزت نفس ہے۔ مہوش نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے واقعہ پر بس میں موجود دوسرے لوگوں کو بھی احتجاج کرنا چاہیے جب ہم ان کی خدمت کرتے ہیں تو ان کا بھی فرض ہے کہ وہ ہمارا ساتھ دیں، آمنہ نے کہا کہ اس واقعہ سے یہ بات واضح ہو گئی ہے کہ خواتین کا معاشرہ میں کیا مقام ہے۔ ہوسٹس ماریہ بشری نے کہا کہ حکومت کو اس حوالے سے سخت ایکشن لینا چاہیے تاکہ آئندہ اس طرح سے کسی کی بے عزتی نہ کی جائے۔ ہوسٹس نضیہ نے کہا کہ ہمارا وزیراعلی پنجاب سے یہ مطالبہ ہے کہ اس واقعہ کا فوری نوٹس لیںاگر ہمارے مطالبہ پر عمل نہ کیا گیا تو چند روز میں پنجاب اسمبلی کے باہر احتجاجی دھرنا دیں گے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...