جماعت اسلامی نے بھارتی وزیر خارجہ کے بیان کو مضحکہ خیز قرار دیدیا

جماعت اسلامی نے بھارتی وزیر خارجہ کے بیان کو مضحکہ خیز قرار دیدیا

  



                    لاہور(سٹاف رپورٹر) امیر جماعت اسلامی پاکستان سید منورحسن نے بھارتی وزیر خارجہ سلمان خورشید کے” پاکستان کو توانائی بحران سے نکالنے اور مشکل وقت میں مدد کرنے “کے بیان کو مضحکہ خیز قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ بھارت نے آج تک پاکستان کو تسلیم نہیں کیا اور پاکستان پر تین جنگیں مسلط کر چکاہے ۔ بھارت نے 1971 ءمیں پاکستان کو دولخت کرنے میں مرکزی کردار ادا کیا اور بھارتی وزیراعظم نے بآواز بلند پکارا تھا کہ ”ہم نے نظریہ پاکستان کو خلیج بنگال میں ڈبو دیا“ ۔ پاکستان کو بنجر بنانے کے لیے پاکستانی دریاﺅں پر درجنوں ڈیم بنا کر پاکستان کا پانی چوری کیا جارہاہے ۔ 65 سال سے کشمیری عوا م اپنے حق خود ارادیت کے حصول کے لیے برسرپیکار ہیں جن کی جدوجہد آزادی کو دبانے کے لیے بھارت نے عالمی قرار دادوں کی پروا نہ کرتے ہوئے کشمیری مسلمانوں کو بندوق کے زور پر غلام بنا رکھاہے اور ساڑھے سات لاکھ بھارتی فوج مسلمانو ں کی نسل کشی کر رہی ہے ۔ بھارت بلوچستان میں علیحدگی کی تحریک کی سرپرستی اور پشت پناہی کر رہاہے جس کے ناقابل تردید ثبوت موجود ہیں ۔سابق وزیر داخلہ رحمن ملک اس کا کئی بار اظہار کر چکے ہیں۔ ان تمام سازشوں اور پاکستان کو ایک بار پھر توڑنے کے منصوبوں کے باوجود بھارتی وزیر خارجہ کا بیان پاکستانی عوام کے زخموں پر نمک چھڑکنے اور نوازشریف کو شیشے میں اتارنے کی کوشش کے سوا کچھ نہیں ۔ سید منورحسن نے کہاکہ دنیا جانتی ہے کہ بھارت کسی صورت بھی پاکستان کا دوست اور خیر خواہ نہیں ہوسکتا۔بھارت کے اندر دیگر اقلیتوں کے ساتھ ساتھ ہندوستان کی دوسری بڑی اکثریت، مسلمانوں کی ہندوﺅں نے زندگی اجیرن کر رکھی ہے ۔ آئے روز مسلم کش فسادات میں مسلمانوں کے گھروں ، دکانوں اور کاروبار کو نذر آتش کر دیا جاتاہے لیکن کوئی ان کی فریاد سننے والا نہیں ۔ ہندو انتہا پسند فوج اور پولیس کی سرپرستی میں مسلمانوں کا قتل عام کر رہے ہیں اور طرح طرح سے مسلمانوں کو تعصب کا نشانہ بنایا جارہاہے ۔

مزید : صفحہ آخر


loading...