لاپتہ افراد کمیشن کی حساس اداروں ، پولیس اور ایف سی حکام کے خلاف فوجداری مقدمات کی سفارش

لاپتہ افراد کمیشن کی حساس اداروں ، پولیس اور ایف سی حکام کے خلاف فوجداری ...
لاپتہ افراد کمیشن کی حساس اداروں ، پولیس اور ایف سی حکام کے خلاف فوجداری مقدمات کی سفارش

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)لاپتہ افراد کے قومی کمیشن نے حساس اداروں ، پولیس اور ایف سی کے حاضر سروس حکام کے خلاف فوجداری مقدمات درج کرنے کی سفارش کر دی۔جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کی سربراہی میں کمیشن نے لاپتہ افراد کے حوالے سے چار سو صفحات پر مشتمل رپورٹ تیار کر لی جس میں کمیشن نے وزارت داخلہ اور وزارت دفاع کو ہدایت کی ہے کہ لاپتہ افراد کے معاملے میں حساس اداروں ، پولیس اور ایف سی حکام کے خلاف فوجداری مقدمات درج کیے جائیں۔ رپورٹ میں 1054افراد میں سے 415 افراد کا سراغ لگا لیا گیا ہے۔رپورٹ کے مطابق کمیشن نے بلوچستان کے 64،پنجاب کے 145، سندھ کے 24 اور خیبر پختوخواہ کے 164 لاپتہ افراد کو لواحقین کے حوالے کر دیا گیا ہے۔فاٹا کے 15،آزاد کشمیر کے10اور وفاقی دارالحکومت کے 23لاپتہ افرا د کو تلاش کیا گیا ہے۔نجی ٹی وی چینل کے مطابق کمیشن نے بلوچستان سے لاپتہ افراد کی 21نعشیں برآمد کرنے کا بھی انکشاف کیا ہے۔رپورٹ رواں ماہ کے آخر میں وزیر اعظم میاں محمد نوازشریف کو پیش کی جائے گی۔

مزید : انسانی حقوق /اہم خبریں