جبری شادی کی کوشش ‘والدین کو سات سال قید کی سز ا سنائی جاسکتی ہے ،برطانوی میڈیا

جبری شادی کی کوشش ‘والدین کو سات سال قید کی سز ا سنائی جاسکتی ہے ،برطانوی ...

  

لندن (بیورورپورٹ)برطانوی میڈیا نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ جبری شادی کر نے کی کوشش کر نے والے والدین کو سات سال قید کی سز ا سنائی جاسکتی ہے ۔برطانوی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق برطانیہ میں ا±ن والدین کو سات سال تک قید کی سزا سنائی جا سکتی ہے جو اپنے بچوں کی جبری شادی کرنے کی کوشش کریں گے۔انگلینڈ اور ویلز میں نافذ ہونے والے نئے قانون کے تحت جبری شادی کرانا قانونی طور پر جرم تصور ہوگا۔جبری شادی کے خلاف مہم چلانے والوں کا کہنا ہے کہ اس سے لوگوں کو واضح پیغام ملے گا۔اعداد و شمار کے مطابق انگلینڈ اور ویلز میں ہر سال تقریباً آٹھ ہزار نوجوانوں اور لڑکیوں کی زبردستی شادی کر دی جاتی ہے تاہم اب اس نئے قانون کے تحت انگلینڈ اور ویلز میں جبری شادی کروانا جرم تصور کیا جائےگا۔اس سے قبل انگلینڈ، ویلز اور شمالی آئرلینڈ میں عدالتیں معاملے میں دیوانی احکامات جاری کرنے کی مجاز تھیں۔

 تاکہ جبری شادی کے شکار لوگوں کو تحفظ فراہم کیا جا سکے۔وزرا ءکا کہنا ہے کہ اس قانون کے نفاذ سے ایسے معاملات کے شکار بچوں کا حوصلہ ملے گا اور وہ جبری شادیوں کے خلاف آگے آئیں گے۔

مزید :

عالمی منظر -