چولستان میں 10 میگاواٹ سولر پاور پلانٹ کےلئے براہ راست شمسی ٹیرف حاصل

چولستان میں 10 میگاواٹ سولر پاور پلانٹ کےلئے براہ راست شمسی ٹیرف حاصل

  

کراچی (اکنامک رپورٹر ) بخش انرجی نے چولستان میں 10 میگاواٹ سولر پاور پلانٹ کےلئے براہ راست شمسی ٹیرف حاصل کرلیا ہے جس کی نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے منظوری دیدی ہے ۔اس حوالے سے یہ پیش رفت حکومت پاکستان کی جانب سے حالیہ دنوں میں 50 میگا واٹ کےلئے انڈیپنڈنٹ پاورپروڈیوسرز(آئی پی پیز) سے تجاویزکی طلبی کے اعلان کے بعددیکھنے میں آئی ہے ۔پاکستان کواس وقت 3300سے 3500 میگاواٹ تک بجلی کی کمی اور روزانہ 10سے 12 گھنٹے کی شدید لوڈشیڈنگ کا سامنا ہے ۔ملک کے پاس 5.9kWh/sqm شمسی شعاع ریزی کی صلاحیت ہے اور اس سے استفادہ توانائی کی موجودہ خراب صورتحال میں بڑا معاون ثابت ہو سکتی ہے ۔ملک میں اب نجی شعبے نے بھی گھروں، تجارتی اور صنعتی سیکٹر کو بجلی کی فراہمی کےلئے حکومت کی معاونت شروع کردی ہے۔ بخش انرجی کے چیئرمین عاصم بخش نے کہا ہے کہ پاکستان کو اس وقت تمام اوقات کی بدترین بجلی کی قلت میں سے ایک کا سامنا ہے اور بجلی کی فراہمی میں تعطل معاشی پیداور پربھی مسلسل اثرانداز ہورہی ہے ۔انھوں نے کہا کہ بخش فاﺅنڈیشن کا10میگاواٹ سولرآئی پی پی ، پاکستان میں شمسی توانائی آئی پی پیز کے منصوبوں کی شروعات کا نقیب بن گیا ہے اور یہ منصوبہ تمام اسٹیک ہولڈرزکی شمولیت کے ذریعے ایک منافع بخش، پائیدار اور ماحول دوست حل کی شکل میں توانائی کے سنگین بحران پرقابوپانے میں معاونت کرے گا۔ چولستان شمسی توانائی کے منصوبوں کی تنصیب کےلئے سب سے زیادہ مناسب مقامات میں سے ایک ہے کیونکہ یہ علاقہ 5.9 کلو واٹ / m² کی اوسط کے ساتھ ایک سال میں تقریبا 300 دنوں تک شمسی روشنی حاصل کرتا ہے۔

 اس لئے ایک ایسے مقام پرشمسی توانائی سے بجلی کی پیداوارسب سے زیادہ ممکن اور قابل عمل ہو گی۔بخش انرجی کی ڈائریکٹر فضا فرحان نے کہا ہے کہ بخش توانائی اپنے شمسی توانائی کے منصوبوں کے ذریعے ملک میں بجلی کی مجموعی کمی میں 0.14 فیصد حصہ ڈالنے کے مقصدکے ساتھ میدان آئی ہے ۔ انھوں نے کہا کہ موجودہ توانائی کے بحران پرنظرڈالی جائے تو پائیداریت کے باعث قابل تجدید توانائی کے ذرائع ہی اس مسئلہ کا واحد قابل عمل حل نظرآتے ہیں ۔واپڈا کے مطابق پاکستان میں شمسی اور متبادل توانائی کے ذرائع سے 2.324 ملین میگا واٹ بجلی پیدا کرنے کی گنجائش موجود ہے اورقومی توانائی کے بحران پرقابوپانے کیلئے ان وسائل کا موثر اورصحیح استعمال کیا جانا چاہیے ۔

مزید :

کامرس -