قتل کے ملزموں کو تاخیر کیساتھ عدالتوں میں پیش کرنیکا انکشاف،سیشن جج نے نوٹس لے لیا

قتل کے ملزموں کو تاخیر کیساتھ عدالتوں میں پیش کرنیکا انکشاف،سیشن جج نے نوٹس ...

  

                                                  لاہور(کامران مغل)ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج طارق افتخار نے ایڈیشنل سیشن ججز کی جانب سے شکایات موصول ہونے پر قتل کے ملزمان کو تاخیر سے عدالتوں میں پیش کرنے کا نوٹس لے لیافاضل جج نے ایڈیشنل سیشن ججز کو جاری مراسلے میں احکامات جاری کئے ہیں کہ ملزموں کی بروقت عدالت میں حاضری کو یقینی بنانے کے لئے انہیں عدالت میں پیش کرنے اور ان کی واپسی کا وقت بھی نوٹ کیا جائے سیشن جج طارق افتخار کو ایڈیشنل سیشن ججز نے شکایت کی تھی کہ پولیس پیشی پر لائے گئے قتل کے ملزموں کو بر وقت عدالتوں میں پیش نہیں کرتی جس وجہ سے عدالتوں کا وقت ضائع ہوتا ہے، ایڈیشنل سیشن ججز کی شکایات پر سیشن جج طارق افتخار نے ڈی ایس پی جوڈیشل کو طلب کیا اور حکم جاری کیا کہ ملزموں کی عدالتوں میں بروقت حاضری یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ بخشی خانہ واپسی کو بھی یقینی بنایا جائے ، فاضل جج نے ایڈیشنل سیشن ججز کے نام مراسلے میں حکم جاری کیا ہے کہ ملزموں کا عدالتوں میں پیشی اور عدالتوں سے واپسی کا وقت باقاعدہ نوٹ کیا جائے، سیشن جج نے ملزموں کی عدالتوں میں پیشی اور روانگی کا وقت نوٹ کرنے کے لئے تمام عدالتوں میں ایک پرفارما بھی جاری کر دیا ہے اور ہدایت کی ہے کہ آئندہ سے اس پرفارمے پر ملزموں کی آمد اور روانگی کا وقت نوٹ کیا جائے۔ ذرائع کے مطابق سیشن جج کی ہدایت پر کی گئی ایک خفیہ انکوائری میں بتایا گیا کہ پولیس ملازمین مبینہ طورپررشوت لے کر قتل کے ملزموں کی ان کے رشتے داروں سے زیادہ سے زیادہ لمبی ملاقات کرواتے ہیں اور انہیں عدالتوں میں فوری پیش کرنے کو ترجیح نہیں دیتے ہیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -