رجسٹریشن برانچ شالیمار ٹاون مخصوص اشٹام فروشوں کی آماجگاہ بن گئی

رجسٹریشن برانچ شالیمار ٹاون مخصوص اشٹام فروشوں کی آماجگاہ بن گئی

  

                          لاہور (اپنے نمائندے سے)محکمہ ریونیو کے شعبہ رجسٹریشن برانچ شالیمار ٹاﺅن، مخصوص اشٹام فروشوں کی آماجگاہ بن گئی من مرضی سے رشوت کی پریکٹس کے باعث متعلقہ ٹاﺅن کی حدود توڑ کر رجسٹریاں پاس کرنا معمول بن گیا شالیمار ٹاﺅن برانچ کے سٹاف میں سرد جنگ شروع کر دی روزنامہ پاکستان کو ملنے والی معلومات تحصیل کینٹ میں واقع شالیمار ٹاﺅن کی رجسٹریشن برانچ کے سٹاف اور ڈی ڈی او رجسٹریشن نے پیسے کمانے کے چکر میں راوی ٹاﺅن کی حدود کو توڑنا اور اشٹام فروشوں کو کسی بھی یونین کونسل کی رجسٹری پاس کرنے کا فری فنڈ دیتے ہوئے رجسٹریاں پاسنگ کرنے کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے ذرائع نے مزید آگاہی دی ہے کہ شالیمار ٹاﺅن کے عملے کی جانب سے عرصہ دراز سے ٹاﺅن کی حدود کراس کرتے ہوئے رجسٹریاں پاس کی جا رہی ہے جن میں شاد باغ کے وثیقہ نویس حاجی پرویز اور حاجی فیاض کے نام سرفہرست ہیں مزید معلوم ہوا ہے کہ شالیمار ٹاﺅن اور راوی ٹاﺅن کو ایک ہی موضع جات دئیے جانے کے باعث اشٹام فروش پٹوار سرکل کھوئی میراں، نولکھا، باغانوالہ سمیت دیگر موضع جات کی رجسٹریوں پر شالیمار ٹاﺅن یونین کونسل تحریر کر کے حدود توڑنے میں مصروف ہے جس کی بڑی وجہ اشٹام فروشوں اور عملہ رجسٹریشن برانچ شالیمار ٹاﺅن میں آپسی تعاون بتایا جا رہا ہے مزید معلوم ہوا ہے کہ موقع فیلڈ کے سروے نہ کئے جانے کے باعث شالیمار ٹاﺅن کی حدود میں کمرشل کو سکنی اور سکنی کو زرعی ظاہر کرتے ہوئے بھی انڈر ویلیو سینکڑوں رجسٹریاں پا س کی جا رہی ہیں جس کا نقصان براہ راست پنجاب حکومت کو برداشت کرنا پڑ رہا ہے اس ضمن میں رابطہ کرنے پر شالیمار ٹاﺅن کے رجسٹری محرر محمد خالد نے آگاہی دی ہے کہ ہمارے دونوں ٹاﺅنوں، شالیمار اور راوی ٹاﺅن میں ایک جیسے موضع جات شامل ہونے کے باعث شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -