ماڈل ٹاﺅن واقعہ ریاستی دہشتگردی ہے،وکلاءنے ہڑتال کا اعلان کر دیا

ماڈل ٹاﺅن واقعہ ریاستی دہشتگردی ہے،وکلاءنے ہڑتال کا اعلان کر دیا

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی)وکلاءتنظیموں نے ماڈل ٹاﺅن واقعہ میں عام شہریوں کے قتل کو ریاستی دہشت گردی قرار دیتے ہوئے آج 18جون کوہڑتال کی کال دے دی ۔ سپریم کورٹ بار نے متاثرہ افراد کی مفت قانونی معاونت کا اعلان کر دیا۔سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے سیکرٹری آصف محمود چیمہ ایڈووکیٹ نے میڈیا کو بتایا کہ بار ایسوسی ایشن ماڈل ٹاﺅن میں پولیس کی طرف سے عام شہریوں کے قتل کی شدید الفاظ میں مذمت کرتی ہے، ماڈل ٹاﺅن واقعہ نے ڈکٹیٹر کے دور کی یاد تازہ کر دی ہے، انہوں نے کہ سپریم کورٹ بار واقعہ کے تمام متاثرہ افراد کی مفت قانونی معاونت کریگی، لاہور ہائیکورٹ بار ایسوسی ایشن نے بھی ماڈل ٹاﺅن واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پولیس نے بلاوجہ پرامن افراد پر حملہ کیا، پولیس گردی کی وجہ سے آٹھ افراد شہید ہو چکے ہیں، ہائیکورٹ بار نے مطالبہ کیا کہ ذمہ دار پولیس افسروں کیخلاف فوری کارروائی کی جائے، دوسری طرف پنجاب بار کونسل نے ماڈل ٹاﺅن میں عام شہریوں کے قتل کے خلاف ہڑتال کی کال دیدی ہے، صوبائی بار کونسل کی طرف سے جاری بیان کے مطابق ماڈل ٹاﺅن واقعہ کیخلاف وکلا آج احتجاجاً ہڑتال کریں گے۔

 وکلاءہڑتال

مزید :

صفحہ آخر -