ننکانہ پولیس کے مبینہ تشدد سے چوری کا ملزم ہلاک

ننکانہ پولیس کے مبینہ تشدد سے چوری کا ملزم ہلاک

  

                   ننکانہ صاحب( نمائندہ خصوصی) چار کروڑ روپے مالیت کے سونے کی چوری کا مبینہ ملزم تھانہ سٹی پولیس ننکانہ صاحب کے تشدد سے ہلاک ، پولیس ملزم کی نعش ڈی ایچ کیو کی ایمرجنسی میں چھوڑ کر موقع سے غائب۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روزننکانہ صاحب کے افضال جیولرز کی دوکان سے نامعلوم چور چار کروڑ روپے مالیت کے طلائی زیورات اور سونا چوری کر کے لے گئے تھے جس کے بعد تھانہ سٹی پولیس ننکانہ نے ملزمان کی تلاش شروع کردی اور اس چوری کے شعبہ میں ملوث کئی افراد کو گرفتار کیا گیا چوری کے واقعہ میں مبینہ ملزم ندیم تھانہ سٹی پولیس کی حراست میں تھا جو کہ پولیس تشدد سے ہلاک ہوگیا ، تھانہ سٹی ننکانہ پولیس کے ایس ایچ او عبدالخالق اور سفید کپڑوں میں ملبوس پولیس ملازمین نے مبینہ ملزم ندیم کی نعش کو ڈی ایچ کیو ہسپتال ننکانہ صاحب کی ایمرجنسی میں چھوڑ کر وہاں سے غائب ہوگئے، ذرائع سے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ ملزم ندیم اور اس کے دیگر ملزمان ساتھی دو روز قبل سی آئی اے پولیس کی حراست میں بھی تھے جن کو وہاں سے تھانہ سٹی پولیس ننکانہ نے اپنے نجی ٹارچر سیل قریبی گاﺅں میں رکھا ہوا تھاجہاں پر ملزمان سے چوری کے متعلق تفتیش کی جارہی تھی ،اس واقعہ کے متعلق ڈی پی او ننکانہ عبدالغفار قیصرانی نے کہا ہے کہ اگرملزم پر تشدد ثابت ہوا تو ذمہ داران کے خلاف سخت قانونی اور محکمانہ کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔

 

مزید :

علاقائی -