سانحہ لاہور کیخلاف ملک بھر میں سوگ، وکلاءکی ہڑتال، دو خواتین سپرد خاک

سانحہ لاہور کیخلاف ملک بھر میں سوگ، وکلاءکی ہڑتال، دو خواتین سپرد خاک
سانحہ لاہور کیخلاف ملک بھر میں سوگ، وکلاءکی ہڑتال، دو خواتین سپرد خاک

  

 لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک )سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے خلاف ایم کیو ایم کی اپیل پر ملک بھر میں یوم سوگ منایا جا رہا ہے ، سانحے میں جاں بحق ہونے والی دو خواتین کو بھی رات گئے سپردخاک کر دیا گیااور پاکستان بار کونسل کی اپیل پر لاہور سمیت ملک بھر میں وکلا کی ہڑتال ہے ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے خلاف ملک بھر میں فضا سوگوار ہے ، قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر لواحقین سوگوار اور نوحہ کناں ہیں ،سیاسی اور مذہبی جماعتوں کے قائدین کے علاوہ ہر مکتبہ فکر نے سانحہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔ادھر کراچی میں متحدہ قومی موومنٹ کی اپیل پر یوم سوگ منایا جا رہا ہے، رابطہ کمیٹی نے عوام سے اپیل کی کہ وہ پاکستان عوامی تحریک کے کارکنوں اور خواتین کی شہادت کے سوگ میں سیاہ پرچم لہرائیں تاہم رابطہ کمیٹی نے ٹرانسپورٹرز ، دکانداروں اور چھوٹے تاجروں کی درخواست پر یوم سوگ کی اپیل پر نظرثانی کرتے ہوئے کراچی سمیت پاکستان بھر کے ٹرانسپورٹرز ، تاجروں اور عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ آج پرامن یوم سوگ کے موقع پر ٹرانسپورٹ اور کاروبار معمول کے مطابق جاری رکھیں۔علاوہ ازیں سانحہ جاں بحق ہونیوالی شازیہ اور تنزیلہ نند بھاوج شالیمار کے علاقے کی رہائشی تھیں جن کی ہلاکت گولی لگنے سے ہوئی، دونوں خواتین کی نمازجنازہ میں علاقہ کے مکینوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی اور اس موقعے پر ہر آنکھ اشکبار تھی ، نماز جنازہ کے بعد انہیں مقامی قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا۔ دوسری جانب سانحہ لاہور کے خلاف پاکستان بار کونسل کی اپیل پر لاہور سمیت ملک بھر میں وکلا کی ہڑتال ہے۔

مزید :

لاہور -