داعش کے جنگجوﺅں کو روکنے میں ناکامی پر عراقی فوج کے چار سینئر کمانڈربرطرف

داعش کے جنگجوﺅں کو روکنے میں ناکامی پر عراقی فوج کے چار سینئر کمانڈربرطرف
داعش کے جنگجوﺅں کو روکنے میں ناکامی پر عراقی فوج کے چار سینئر کمانڈربرطرف

  

بغداد(مانیٹرنگ ڈیسک) عراق کے وزیراعظم نوری المالکی نے سیکیورٹی فورسز کے چار سینئر کمانڈروں کو پیشہ ورانہ عسکری فرائض سے غفلت برتنے پر برطرف کردیا جن میں صوبہ نینویٰ میں عراقی فوج کے کمانڈر مہدی صباح غراوی بھی شامل ہیں۔عراق کے سرکاری ٹیلی ویژن کے مطابق یہ چاروں کمانڈر اپنے پیشہ ورانہ اور عسکری فرائض انجام دینے میں ناکام رہے تھے اور ان میں سے ایک کمانڈر ہدایت عبدالرحیم میدان جنگ سے فرار ہوگئے تھے جن کے خلاف ایک فوجی عدالت میں ان کی عدم موجودگی میں مقدمہ چلایا جائے گا۔عراقی وزیراعظم نے چاروں اعلیٰ کمانڈروں کو شمال مغربی شہر موصل پر ISIS( داعش) اور اس کے اتحادی دوسرے مسلح مزاحمت کار گروپوں کے قبضے کے ایک ہفتے کے بعد ان کے عہدوں سے ہٹایا ہے۔داعش نے مقامی مسلح قبائل اور دوسرے گروپوں کی مدد سے گذشتہ ایک ہفتے کے دوران پورے صوبہ نینویٰ اور تین اورشمالی صوبوں کے بیشتر علاقوں پر قبضہ کر لیا ہے۔مقامی لوگوں اور میڈیا کے نمائندوں کی اطلاعات کے مطابق موصل اور دوسرے شمالی شہروں پر داعش کے حملے کے وقت عراقی فوجیوں نے بالکل بھی مزاحمت نہیں کی تھی اور وہ ان شہروں کا دفاع کرنے کے بجائے اپنی وردیاں ،گاڑیاں ،اسلحہ اور چوکیاں چھوڑ کر فرار ہوگئے تھے۔

مزید :

بین الاقوامی -