فلسطینی نژاد امریکی ماڈل بیلا حدید پر سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کی توہین کا الزام،پوری دنیا میں ہنگامہ برپا ہوگیا

فلسطینی نژاد امریکی ماڈل بیلا حدید پر سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کی ...
فلسطینی نژاد امریکی ماڈل بیلا حدید پر سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کی توہین کا الزام،پوری دنیا میں ہنگامہ برپا ہوگیا

  


واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن) فلسطینی نژاد امریکی ماڈل بیلا حدید نے مبینہ طور پر سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کی توہین کرکے عرب دنیا کے شہریوں کو سیخ پا کردیا ہے ، مشرقِ وسطیٰ کے لوگوں نے ماڈل گرل کے خلاف سوشل میڈیا پر مہم چلا رکھی ہے جو دنیا کے ٹاپ ٹرینڈز میں سے ایک بن چکی ہے۔

اتوار کے روز ماڈل گرل بیلا حدید نے اپنی انسٹاگرام سٹوری پر ایک تصویر شیئر کی جس میں انہوں نے اپنا جوتا دکھایا تھا۔ یہ تصویر ایک ایئر پورٹ پر بنائی گئی تھی جس میں ماڈل گرل کے پاﺅں کی طرف سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے طیارے کھڑے ہوئے نظر آرہے ہیں۔

@bellahadid

سوشل میڈیا پر یہ تصویر سامنے آئی تو سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات سمیت مشرقِ وسطیٰ کے لوگوں کو سخت غصہ چڑھ گیا اور انہوں نے سوشل میڈیا پر ماڈل گرل کے خلاف مہم شروع کردی۔ کئی سوشل میڈیا صارفین نے مطالبہ کیا کہ ان کے ملکوں میں بیلا حدید کے داخلے پر پابندی عائد کی جائے جبکہ بہت سے لوگوں نے ان تمام برانڈز کا بائیکاٹ کرنا شروع کردیا ہے جس کیلئے بیلا حدید ماڈلنگ کرتی ہیں۔

ٹوئٹر پر عرب دنیا کے لوگوں کے غم و غصے کا یہ عالم ہے کہ #BellaHadidIsRacist کے نام سے ہیش ٹیگ دنیا کے ٹاپ ٹرینڈز میں شامل ہوچکا ہے۔

@bellahadid

سوشل میڈیا پر چلنے والی مہم کے بعد بیلا حدید نے اپنے ایک بیان میں عرب دنیا کے لوگوں اور مسلمانوں سے معافی مانگ لی ہے۔

@bellahadid

بیلا حدید نے اپنے وضاحتی بیان میں کہا ہے کہ انہوں نے ایسے ہی ایک تصویر شیئر کی تھی ، انہیں تو اندازہ بھی نہیں تھا کہ ان کے پاﺅں کی طرف سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے جہاز کھڑے ہوئے ہیں۔ خیال رہے کہ عرب دنیا اور برصغیر میں کسی کو جوتا دکھانا توہین کی علامت سمجھا جاتا ہے۔

@bellahadid

مزید : عرب دنیا /تفریح