ہمارے5 سال کا نصف قرضہ پی ٹی آئی نے ایک برس میں لیا احسن اقبال 

 ہمارے5 سال کا نصف قرضہ پی ٹی آئی نے ایک برس میں لیا احسن اقبال 

  

نارووال(نمائندہ خصوصی،نامہ نگار)پاکستان مسلم لیگ( ن) کے سیکرٹری جنرل احسن اقبال نے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کے پانچ سال کا نصف قرضہ موجودہ حکومت نے ایک سال (بقیہ نمبر20صفحہ12پر )

کے اندر لیا ،اس کے عوض کوئی ترقیاتی کام نہیں کیا ،پچھلے قرضوں کی تمام تفصیل اسٹیٹ بنک کے پاس وزارت خزانہ کے پاس موجود ہے وہ قوم کے سامنے بھی آنی چاہے، پی ٹی آئی مسلم لیگ ن کے پانچ سالوں میں دس ہزار ارب کے قرضوں پر اعتراض کرتی ہے تو ہم نے12ہزار میگا واٹ بجلی کے نئے منصوبے لگائے، ملک کے اندر موٹروے کا جال بچھایا گےا، سی پیک کو کامیاب کیا،گوادر پورٹ کو بنایا ،احسن اقبال نے کہا کہ پی ٹی آئی نے ایک سال میں پانچ ارب کا قرضہ لیا ہے، ایک اینٹ تک نہیں لگائی،انہوں نے کہا کہ حکومت کا ایک ہی اصول ہے کہ ہر کسی پر کیچڑ اچھالا جائے ،مرادسعیدکی ڈگری کے حوالے سے بہت سے سکینڈل بنے مرادسعید کو آدھے گھنٹے میں تین پرچے کروائے گئے،اگر موصوف اپنی وازارت کی دستاویزات پڑھ لیتے توانہیں اتنا کچھ کہنے کی ضروت نہ پڑتی،سابق وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ جاوید صادق کی کمپنی کو میں نے یاوزیراعظم نے ٹھیکہ دیا بالکل جھوٹ ہے،انہوں نے کہا کہ چین کی حکومت نے 2015میں تین کمپنیوں کو نامزد کیا ،ان کمپنیوں کو سلیکٹ نہ میں نے کیا نہ وزیراعظم نے،چین کی حکومت نے تین کمپنیوں کو فریم ورک ایگریمنٹ جو پاکستان کا تھا نامزد کیا ان تین کمپنیوںکی نیلامی ہوئی جولویسٹ کمپنی تھی اسے ٹھیکہ دیاگےا ،اس میں اُس وقت کی حکومت کا کوئی قصور نہیں تھا ،احسن اقبال نے کہا کہ مراد سعید جہاں پچاس ارب اضافے کی بات کرتے ہیں ،اس میں وہ مکمل طور پر نا سمجھ ہیں،جب کسی پی سی ون میں کوئی نئی چیزیں شامل کی جاتی ہیں،تو پی سی ون کو ریویز کیاجاتا ہے ،ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے اپنے کپ آفس نارووال میں روزنامہ پاکستان کے نمائندہ میاں محمد شفیق سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ پی سی ون کی منظوری منسٹر نہیں دیتا ،پی سی ون کی منظوری سی ڈبلیو پی اور ایکنیک کے فورم دیتے ہیں،اس منصوبے کی جب منظوری ہوئی اس میں کے پی کے کی حکومت مکمل طور پر منصوبے میں شامل تھی۔

 احسن اقبال

مزید :

ملتان صفحہ آخر -