پاکستان جی ایس پی پلس کی سہولت سے فائدہ اٹھائے ‘ سفیر یورپی یونین

پاکستان جی ایس پی پلس کی سہولت سے فائدہ اٹھائے ‘ سفیر یورپی یونین

  

 ملتان ( نیوز رپورٹر) پاکستان میں تعنیات یورپی یونین کے سفیر مسٹر جین فرینکوزکوئین نے کہا ہے کہ پاکستان جی ایس پی پلس کی سہولت(بقیہ نمبر8صفحہ12پر )

 سے فائدہ اٹھاتے ہوئے ٹیکسٹائل،لیدر،سرجیکل،انسٹرومنٹس،کھیلوں کا سامان کی برآمدات میں اضافہ کرسکتا ہے اس کے علاوہ تازہ پھلوں اور سبزیوں کی برآمدات بھی ممکن ہے وہ گزشتہ روز ایوان تجارت و صنعت کے عہدیداروں سے ملاقات میں گفتگو کررہے تھے ان میں صدر محمد سرفراز،زرعی یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر راو¿ محمد آصف علی،سینیئر نائب صدر ایوان خواجہ بدر منیر،خواجہ محمد اعظم،ٹینریز ایسوسی ایشن کے رہنما خواجہ مہر علی،میجر (ر)محمد طارق،سیدہ ثروت زہرہ،خرم جاوید بٹ،مس ملہان،مسز سعدیہ،عبد الرحمن نقاش موجود تھے انہوں نے کہا کہ مقامی صنعت کاروں اور ایکسپورٹرزکے تحفظات کے بارے میں یورپی یونین کے ممالک کو آگاہ کریں گے اور کوشش کریں گے کہ انہیں آئندہ مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے خواجہ مہر علی نے انہیں بتایا کہ یورپی یونین میں شامل ممالک پاکستانی ایکسپورٹرزکے ساتھ امتیازی سلوک کرتے ہیں بنگلہ دیش،بھارت اور دیگر ممالک کے مقابلے میں انہیں متعدد مراحل سے گزرنا پڑتا ہے جس کی وجہ سے ان کی مصنوعات پر اضافی اخراجات ہو جاتے ہیں اور انہیں منافع کی بجائے نقصان اٹھانا پڑتا ہے انہوں نے یورپی یونین میں شامل ملکوں نے اپنے اپنے قوانین اور قوائد و ضوابط بنائے ہوئے ہیں کہیں انہیں ہیلتھ سر ٹیفیکیٹس اور دیگر قانونی پیچیدگیوں میں الجھایا جاتا ہے انہوں نے مزید کہا کہ پاکستانی ایکسپورٹرزکو ویزے کے حصول میں بڑی مشکلات پیش آتی ہیں جبکہ نان جینوئن افراد باآسانی ویزہ حاصل کر لیتے ہیں انہوں نے کہا کہ جرمنی والے ہر بار یہی کہتے ہیں کہ ۷۶ ایکسپورٹر غائب ہو گئے ہیں یورپی یونین کے سفیر نے کہا کہ وہ ان کی مشکلات ختم کرانے کی کوشش کریں گے انہوں نے کیمیکل اورمینو فیکچرنگ کے شعبہ میں جوائنٹ ایڈونچر کا عندیہ بھی دیا انہوں نے کہا کہ پاکستان کے حالات ماضی کے مقابلے میں بہتر ہیں پاکستان تیزی سے آگے بڑھنے والی معیشت ہے صدر ایوان محمد سرفراز نے کہا کہ یورپی یونین کو چیمبر کی تصدیق اور سفارش پر بغیر ہچکچاہٹ کے ویزہ جاری کرنا چاہیے جنوبی پنجاب میں آم،کنو،سٹابری،وافر اور معیاری پائی جاتی ہے جن کی ویلیو ایڈیشن کر کے مناسب منافع کمایا جاسکتا ہے خواجہ محمد اعظم نے بتایا کہ ہماری آموں کی گٹھلیاں ضائع ہو رہی ہیں اگر یورپی کاسٹمیٹکس کمپنیاں یہاں اپنی فیکٹریاں لگا لیں تو انہیں نہ صرف سستا خام مال مل جائے گا بلکہ اس علاقہ کے لوگوں کے حالات بھی بدل جائیں گے پروفیسر ڈاکٹر آصف نے سفیر کو جولائی میں ملتان میں منعقدہ مینگو فیسٹیول میں شرکت کی دعوت دی وومن انٹر پرینورز کی چیئر پرسن ثروت زہرہ نے اپنی کارکردگی اور سرگرمیوں سے آگاہ کیا ہے۔

چوک پرمٹ (نمائندہ پاکستان) خواتین کے حقوق کی جدوجہد میں دنیا بھر کی خواتین کی طرح مختیار مائی کانام کسی سے ڈھکاچھپا نہیں(بقیہ نمبر7صفحہ12پر )

 17سال پہلے علم کا جو چراغ مختیار مائی نے جلایا تھا آج ایک شمع کی مانندروشنیاں تقسیم کررہا ہے ان خیالات کا اظہار یورپی یونین کے سفیر مسٹر جین فرینکوزکوئین نے مختیار مائی گرلز ہائی سکول میر والا کو کمپیورٹرزڈونیٹ کرنے کی تقریب سے خطاب کے دوران کیاتقریب کا باقائدہ آغاز تلاوت کلام پاک اور نعت رسول مقبول سے کیا گیا تقریب سے خطاب کرتے ہوئے یورپین یونین کے ہائی کمشنر نے مزید کہا کہ اس پروگرام میں میری فیملی سمیت شرکت ایک اعزاز کی بات ہے انہوں نے مزید بتایا مختیار مائی نے کوئی مراعات نہیں لیں بلکہ تعلیم کا انتخاب کیا یہی وجہ ہے کہ آج ان کا لگایا ہوا تعلیم کا پودا ایک تناآور درخت بن کر علاقے کی عوام کو سایہ فراہم کررہا ہے انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں تعلیم خصوصی طور پر بچیوں کے دے کر ہی ترقی ممکن ہے اس موقع پر انہوں نے میڈیا کے توسط سے عوام سے اپیل کی کہن اپنے بچوں کو تعلیم جیسے زیور سے مستفید کرائیں اسی سے ہی ہماری ترقی ممکن ہے انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں آبادی کے زیادہ ہونے اور نوجوانوں کے بے روز گار ہونے سے مسائل جنم لے رہے ہیں ان مسائل کو ہم تعلیم سے ہی حل کرسکتے ہیں انہوں نے مزید بتایا کہن ہم پااکستان کے بےشتر علاقوں کا وزٹ کرچکے ہیں اور ہم نے ہر پلیٹ فارم پر تعلیم کی اہمیت کا زور دیا انہوں نے مزید بتایا کہ تعلیم بارے میڈم مختیارمائی کی قربانیاں کسی سے ڈکھی چھپی نہیں اور انکی تعلیم بارے کاوشوں پر انہیں مبارکباد دیتا ہوں ۔ اس موقع پر ہائی کمشنر ایچ ای جین تران کوئس کی اہلیہ نے کہا کہ ہم پاکستان کو اپنا دوسرا گھر سمجھتے ہیںآج سے 4سال قبل بھی ہم میروالا میں آئے اور تعلیم بارے اس آہنی خاتون کی کاکردگی کو میں خراج تحسین پیش کرتی ہوں۔ آخر میں مختیار مائی نے اپنے معزز مہمانوں کا شکریہ اداکیا۔ہائی کمشنراور انکی اہلیہ کے خطاب کو مختیار مائی کے پروگرام کوارڈینیٹر محمد عمران نے ترجمہ کرکے عوام کو آگاہ کیا پروگرام سے مصباح حسین،حمنہ بلال،عبدالرحمٰن اور انکے ساتھی،عثمان فاروق،ایمان فاطمہ،ثاریہ رمضان ،القمادین اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔

ہائی کمشنر یورپی یونین

مزید :

ملتان صفحہ آخر -