روجھان کشتی حادثہ،دریائے سندھ سے4لاشیں برآمد،نماز جنازہ ادا،آج پھر ریسکیو آپریشن شروع

  روجھان کشتی حادثہ،دریائے سندھ سے4لاشیں برآمد،نماز جنازہ ادا،آج پھر ...

  

روجھان (نمائندہ پاکستان) دریائے سندھ شاہوالی میں سکھانی قبیلے کی خواتین اور بچوں سمیت پانچ افراد کی تلاش کا سلسلہ دوسرے  روز جاری تین نوجوان لڑکیاں ایک بچے کی لاش نکال لی ایک نوعمر لڑکی کی تلاش جاری رات ہونے پر آپریشن معطل۔تفصیل کے مطابق دریائے سندھ شاہوالی میں ڈوبنے والے خواتین اور بچوں سمیت پانچ افراد کی تلاش کا سلسلہ جاری رہا۔ریسکیو ون ون ٹو ٹو کے انچارج ملک اعجاز احمد کی نگرانی میں دوسرے روز اعلی الصبح (بقیہ نمبر18صفحہ12پر)

شروع ہوا ریسکیو سرچ آپریشن میں ریسکیو ون ون ٹو ٹو کی ٹیموں کے علاوہ غوط خوروں نے بھی حصہ لیا سرچ آپریشن کے دوران دختر سوالی،دختر مراد،دختر پھیڑدا  اور احسان سمت چار لاشیں دریا سے نکال لی گی  لاشیں دیکھ کر روجھان کے علاقہ شاہوالی میں ہر آنکھ اشکبار تھی جبکہ سکھانی قبیلے میں کہرام مچا ہوا تھا۔ ملک اعجاز احمد کی نگرانی میں ایک خاتون کی تلاش کے لیے رات گئے سرچ آپریشن جاری رہا مگر خاتون کی لاش نہ مل سکی تاہم رات ہونے کے باعث سرچ آپریشن معطل کردیا گیا اس سلسلہ میں اسسٹنٹ کمشنر روجھان اور ایڈمنسٹریٹر عمران منیر نے سرچ آپریشن کا دورہ کیا اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر روجھان عمران منیر کا کہنا تھا کہ منگل کے دن اعلی الصبح خاتون کی تلاش کے لیے سرچ آپریشن دوبارہ شروع کیا جائے گا  تین خواتین اور ایک بچہ چار افراد کی نماز جنازہ آبائی گاوں شاہوالی میں ادا کردی گء نماز جنازہ میں سینکڑوں افراد نے شرکت کی واضح رہے کہ اتوار کے دن سکھانی قبیلے کی دریائے سندھ شاہوالی میں کشتی الٹ گء تھی  جسمیں خواتین بچوں سمیت نو افراد دریا میں ڈوب گئے تھے جس میں تین خواتین اور ایک بچے سمیت چار افراد کو موقع پر موجود افراد نے بچا لیا تھا جبکہ تین خواتین ایک بچے دریا میں ڈوب گئے تھے جن کی تلاش کے لیے دو روز سے ریسکیو ون ون ٹو ٹو کا سرچ آپریشن جاری ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -