انار کلی زیر تعمیر پولیس کمپلیکس کی قانونی حیثیت ڈی جی ایل ڈی اے کو 30 روز میں فیصلہ کرنیکا حکم

انار کلی زیر تعمیر پولیس کمپلیکس کی قانونی حیثیت ڈی جی ایل ڈی اے کو 30 روز میں ...

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ نے ڈی جی ایل ڈی عثمان معظم کے خلاف دائرتوہین عدالت کی درخواست پرڈی جی ایل ڈی اے کو حکم دیاہے کہ انار کلی زیر تعمیر پولیس کمپلیکس کی قانونی حیثیت کے حوالے سے 30 روز میں فیصلہ کیا جائے،درخواست گزار شیراز زکاء ایڈووکیٹ کی جانب سے ڈی جی ایل ڈی اے اور آئی جی پنجاب پولیس کو فریق بنایا گیا تھا،درخواست گزار کا موقف تھا کہ پولیس کمپلیکس کی تعمیر سے قبل ماحولیات ڈیپارٹمنٹ سے این او سی نہیں لیا گیا، رہائشی علاقہ میں پولیس کمپلیکس تعمیر نہیں کیا جا سکتا ہے، 10سالوں میں دہشتگردی کے واقعات ہو چکے ہیں، عدالت سے استدعا ہے پولیس کمپلیکس کی تعمیر روکنے کا حکم دیا جائے۔ اورعدالتی حکم پر عمل درآمد نہ کرنے پر ڈی جی ایل ڈی کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے۔

مزید :

علاقائی -