ننکانہ صاحب، متحارب گروہوں کی ہسپتال میں ایک دوسرے پر فائرنگ، 4قتل،5زخمی

ننکانہ صاحب، متحارب گروہوں کی ہسپتال میں ایک دوسرے پر فائرنگ، 4قتل،5زخمی

  

ننکانہ صاحب (نمائندہ خصوصی)ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال ننکانہ صاحب کی ایمرجنسی وارڈ میں نواحی گاؤں بگا چک کی دو متحارب پارٹیوں کی اندھا دھند فائر نگ کے نتیجہ میں چار افراد قتل جبکہ پانچ افراد شدید زخمی ہوگئے۔ زخمیوں کو تشویشناک حالت کے پیش نظر لاہور اور فیصل آباد کے ہسپتالوں میں ریفر کردیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق موضع بگا چک کے سابق ناظم چوہدری محمد اختر آرائیں گروپ اور فیصل جٹ کے درمیان کافی عرصہ سے تنازع چلا آرہا تھا کہ گزشتہ رات گاؤں میں مبینہ طور پر شادی کے ٹینٹ لگانے پر ایک مرتبہ پھر جھگڑا ہوگیا جس کے نتیجہ میں متعدد افراد شدید زخمی ہوگئے، اس دوران میڈیکل رزلٹ لینے کیلئے دونوں گروپ ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال ننکانہ صاحب پہنچے جہاں آمنا سامنا ہوتے ہی فریقین نے ہسپتال کی ایمرجنسی وارڈ میں ہی ایک دوسرے پر اندھا دھند فائرنگ کر دی اور نتیجہ میں سابق ناظم اختر آرائیں کا بھائی تنویر چوہدری سمیت فیصل گروپ کے عبدالواحد، عبدالقادر اور محمد یوسف موقعہ پر ہی جاں بحق ہوگئے جبکہ مذکورہ واقعہ میں دیگر پانچ افراد جن میں فیصل جٹ، اسامہ جاوید، عابد، ندیم اور نصیر چوہدری شامل ہیں شدید زخمی ہوگئے جنہیں تشویشناک حالت کے پیش نظر لاہور اور فیصل آباد کے ہسپتالوں میں ریفر کردیا گیا ہے۔ فائرنگ اتنی شدید تھی کہ ایمرجنسی وارڈ میں داخل مریضوں اور عملہ نے بڑی مشکل سے بھاگ کر اپنی جانیں بچائیں جبکہ شدید فائرنگ کی آواز سن ہسپتال کے قریبی محلہ کے افراد خوفزدہ ہوکر گھروں سے باہر نکل آئے، عینی شاہدین کے مطابق درجنوں فائر کیے گئے جس سے علاقہ بھر میں خوف و ہراس کی فضاء پھیل گئی،اطلاع ملتے ہی ڈی پی او ننکانہ صاحب محمد نوید پولیس کی بھاری نفری کے ہمراہ ڈسٹر کٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال ننکانہ صاحب پہنچ گئے۔

ننکانہ قتل

مزید :

صفحہ اول -