لیڈیزکلب کو قومی ورثہ قرار دیکر فنڈز جاری کیے جائیں: فہیم الرحمن سہگل

لیڈیزکلب کو قومی ورثہ قرار دیکر فنڈز جاری کیے جائیں: فہیم الرحمن سہگل

  

لاہور(کامرس ڈیسک) لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے نائب صدر فہیم الرحمن سہگل نے پنجاب حکومت پر زور دیا ہے کہ وہ خواتین کے تاریخی نمائندہ ادارہ "لیڈیز کلب"کو قومی ورثہ قرار دے اور اس کی فوری بحالی کے لیے فوری طور پر فنڈز جاری کرے۔ لیڈیز کلب لاہور میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 1938ء میں قائم شدہ لیڈیز کلب کی مرمت، تزئین و آرائش اور بحالی کے لیے فوری اقدامات اٹھانے چاہئیں کیونکہ یہ خواتین کا نمائندہ بہت اہم ادارہ ہے، جو قومیں ورثہ نہیں سنبھالتی وہ مایوسی کا شکار ہوتی ہیں، آبادی کا نصف خواتین پر مشتمل ہے جنہیں تجارتی و معاشی سرگرمیوں کا حصہ بنانے کے لیے بہترین ماحول مہیا کرنا بہت ضروری ہیہے، ان کے فعال کردار کے بغیر ملک معاشی ترقی کا خواب پورا نہیں کرسکتا۔ انہوں نے کہا کہ ماضی کی نسبت آج صورتحال بہت بہتر ہے اور خواتین غیرروایتی شعبوں سے ہٹ کر بوتیک، ٹیکسٹائل ڈیزائننگ، بینکنگ اور انفارمیشن ٹیکنالوجی سمیت دیگر شعبوں میں کامیابی سے کام کررہی ہیں،حالیہ کچھ عرصہ کے دوران کاروباری شعبہ سے وابستہ خواتین کی ترقی کے لیے کافی کام کیا گیا ہے مگر ابھی بہت کچھ کرنا ضروری ہے۔ فہیم الرحمن سہگل نے مزید کہا کہ خواتین کو تمام تجارتی و معاشی شعبوں میں صلاحیتوں کا بھرپور مظاہرہ کرنا چاہیے تاکہ ملک معاشی بحالی کا ہداف کم سے کم وقت میں حاصل کرسکے۔

انہوں نے مزید کہا کہ خواتین کی تعلیم و تربیت بہت ضروری ہے تاکہ اْن کی صلاحتیں نکھر کر سامنے آئیں۔اس موقع پر لیڈیز کلب کی صدر مسز نزہت ہمدانی، نائب صدر ناظمہ شاہد، جنرل سیکریٹری سفیرا خالد اور جائنٹ سیکریٹری تسکین شاہدہ بھی موجود تھیں۔

شعبہ اطلاعات

کیپشن

مزید :

کامرس -