دیار غیر میں بسنے والے اْردو زبان کی بہتر خدمت کررہے ہیں،شہناز بانو

دیار غیر میں بسنے والے اْردو زبان کی بہتر خدمت کررہے ہیں،شہناز بانو

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)دیار غیر میں بسنے والے اْردو زبان و ادب کی نسبتا" زیادہ بہتر خدمت کر رہے ہیں۔ اْ ن کی اپنی زبان وادب سے محبت کی اس سے بڑی مشال اور کیا ہوگی کہ وہ کسی دوسرے مْلک کی تہذیب وتمدن میں تحلیل ہوکر بھی اپنی زبان وادب کی خدمت میں کوشاں ہیں۔ ان خیالات کا اظہاربرطانیہ میں عرصہ دراز سے مقیم معروف شاعرہ، ادیبہ، ناول نگار اور درس وتدریس سے وابستہ محترمہ شہناز بانو نے گذشتہ روز تحریک نفاذ اردو پاکستان کی 172 ویں شام اْردو میں بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب کی صدارت تحریک کے صدر نسیم شاہ ایڈوکیٹ نے کی۔ انہوں نے شہناز بانو کا خیر مقدم کرتے ہوئے اردو زبان وادب کے حوالے سے اْن کی خدمات کو زبردست خراج تحسین پیش کیا۔ اور وطن کی محبت کے حوالے سے اْن کے تازہ ناول "وطن کی بیٹی" پر مبنی اْن کے حْب الوطنی کے جذبات کو بطورخاص سراہا۔ تقریب کی نظامت معروف صحافی و ناول نگار صائمہ نفیس نے بحسن وخوبی ادا کی۔ جبکہ منظوم خطاب کرنے والوں میں معروف شاعرہ و افسانہ نگار ناہید عزمی اور مزاح گو شاعرہ روبینہ تحسین بینا شامل تھیں۔ تقریب کے شْرکاء میں پروفیسر اوج کمال، سید سلیم احمد ایڈوکیٹ، ارشاد چنائے، کوثر وقار، جیسنٹا ڈینئل اور دیگر ادب دوست شامل تھے۔ پْرتکلف عشائیہ پر تقریب کا اختتام ہوا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -