خیبرپختونخواکابجٹ آج پیش کیا جائے گا

خیبرپختونخواکابجٹ آج پیش کیا جائے گا
خیبرپختونخواکابجٹ آج پیش کیا جائے گا

  


پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن)خیبرپختونخواکابجٹ آج پیش کیا جائے گا،خیبرپختونخواکے آئندہ مالی سال کے مجوزہ بجٹ کا حجم900 ارب روپے ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بجٹ میں گریڈ1تا16کے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 10 فیصد اضافے کی تجویزہے ، گریڈ17سے19کے ملازمین کی تنخواہوں میں 5 فیصد اضافے کی تجویزہے جبکہ صوبائی وزرا کی تنخواہوں میں 12 فیصد کمی کی جائے گی،دستاویزات کے مطابق خیبرپختونخواکے آئندہ مالی سال کے مجوزہ بجٹ کا حجم900 ارب روپے ہے،بجٹ میں اخراجات کاتخمینہ855 ارب روپے لگایا گیا ہے،خیبرپختونخوا کا پیش کئے جانے والا بجٹ 45 ارب روپے کا فاضل بجٹ ہے، صوبے کو وفاق سے 589 ارب روپے ملیں گے، صوبے کو اپنے وسائل اور وفاق سے 900 ارب روپے کی آمدن متوقع ہے۔

دستاویزات کے مطابق بجٹ میں غیرترقیاتی اخراجات کےلئے 457 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں،پرائیویٹ سیکٹر میں 6 لاکھ سے زیادہ ملازمتوں کے مواقع پیدا کئے جائیں گے جبکہ پبلک سیکٹر میں 32 ہزار 682 ملازمتوں کے مواقع پیدا کئے جائیں گے،دستاویزات کے مطابق اے ڈی پی میں 82 ارب کی غیرملکی امداد اور قرضہ بھی شامل ہیں،اے ڈی پی میں 108 ارب روپے صوبائی حصہ ہے، اے ڈی پی میں 962 جاری اور 394 نئی سکیمیں شامل ہیں، بجٹ میں سالانہ ترقیاتی پروگرام کیلئے 236 ارب روپے مختص کرنے کی تجویزہے،قبائلی اضلاع میں غیر ترقیاتی اخراجات کےلئے 79ارب روپے مختص کئے گئے ہیں ،قبائلی اضلاع کےلئے 162 ارب روپے رکھنے کی تجویززیرغور ہے،بجٹ میں صحت سہولت سکیم کےلئے 6 ارب روپے رکھیں جائیں گے، صحت کا بجٹ 46 ارب سے بڑھا کر 55 ارب کرنے کی تجویزہے۔

بجٹ میں پولیس کےلئے 48 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز ہے،46 ارب روپے مقامی حکومتوںاورزرعی منصوبوں کےلئے 2 ارب 20 ارب روپے مختص کئے جائینگے، بلین ٹری پراجیکٹ کےلئے 1 ارب 80 کروڑ وپے رکھے جائیں گے،سیاحت کے فروغ کےلئے 17 ارب روپے رکھنے کی تجویزہے۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور