ملزم خاموش بھی رہے توجرم نیب نے ثابت کرناہے،سپریم کورٹ،محکمہ خوراک بلوچستان کے گندم خوردبردمیں ملوث ملازمین کی سزائیں کالعدم قرار

ملزم خاموش بھی رہے توجرم نیب نے ثابت کرناہے،سپریم کورٹ،محکمہ خوراک بلوچستان ...
ملزم خاموش بھی رہے توجرم نیب نے ثابت کرناہے،سپریم کورٹ،محکمہ خوراک بلوچستان کے گندم خوردبردمیں ملوث ملازمین کی سزائیں کالعدم قرار

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان نے محکمہ خوراک بلوچستان کے گندم خوردبردمیں ملوث ملازمین کی اپیلیں منظورکرلیں اور ان کی سزائیں کالعدم قراردیدیں،چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیئے کہ ملزم خاموش بھی رہے توجرم نیب نے ثابت کرناہے،گندم خورد بردمیں ملوث ٹھیکیداروں نے پلی بارگین کرلی،حکومت کانقصان توپلی بارگین سے پوراہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس پاکستان جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے محکمہ خوراک بلوچستان کے گندم خوردبردمیں ملوث ملازمین کی اپیلوں پر سماعت کی ،ملزمان پرگندم سٹاک میں خوردبردکاالزام تھا،دوران سماعت چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ملزم خاموش بھی رہے توجرم نیب نے ثابت کرناہے،گندم خوردبردمیں ملوث ٹھیکیداروں نے پلی بارگین کرلی،حکومت کانقصان توپلی بارگین سے پوراہوگیا۔

جسٹس طارق مسعود نے کہا کہ گندم کے ٹرک راستے میں ہی سے غائب ہوئے،عدالت نے کہا کہ محکمہ خوراک کے ملازمین نے کام میں غفلت کی توکارروائی ہوگی،چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے استفسار کیا کہ ادارہ جاتی غفلت پرنیب قانون کااطلاق کیسے ہوسکتاہے؟ شک وشبہ سے بالاترہوکرکیس ثابت کرنانیب کاکام ہے،عدالت نے محکمہ خوراک بلوچستان کے گندم خوردبردمیں ملوث ملازمین کی اپیلیں منظورکرلیں اور ان کی سزائیں کالعدم قراردیدیں۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /اسلام آباد