”بابراعظم اور فخر زمان کا ہمیں کیا فائدہ ہے اگر یہ۔۔۔“ رمیز راجہ نے پاکستانیوں کے جذبات کی ترجمانی کر دی

”بابراعظم اور فخر زمان کا ہمیں کیا فائدہ ہے اگر یہ۔۔۔“ رمیز راجہ نے ...
”بابراعظم اور فخر زمان کا ہمیں کیا فائدہ ہے اگر یہ۔۔۔“ رمیز راجہ نے پاکستانیوں کے جذبات کی ترجمانی کر دی

  


مانچسٹر (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کے مایہ ناز سابق کرکٹر اور کمنٹیٹر رمیز راجہ بھارت کے ہاتھوں شکست کے بعد کھلاڑیوں پر برس پڑے ہیں۔

رمیز راجہ کا کہنا ہے کہ بابراعظم کے ٹیلنٹ کا ہمیں کیا فائدہ اگر یہ ہمیں میچ نہیں جتوا سکتے اور فخر زمان کا ہم نے کیا کرنا ہے اگر وہ روہت شرما کی طرح نہیں کھیل سکتے اور یہی بھارت اور پاکستان کی ٹیموں کے درمیان اصل فرق ہے۔ ورلڈکپ کی تیاری کیلئے پاکستان کے پاس پانچ سال تھے اور ان پانچ سالوں کے دوران کھلاڑیوں کی صلاحیتوں میں کوئی فرق نہیں آیا، کوئی گیم پلان نہیں بنایا گیا، حتیٰ کے ان پانچ سالوں میں یہ کوئی بلے باز نہیں ڈھونڈ سکے۔

انہوں نے کہا کہ ہر شکست کے بعد مشاہدے کی ضرورت ہوتی ہے، ایک موقع ہوتا ہے، تبدیلی کی ضرورت ہوتی ہے، لیکن اب مکمل طور پر تبدیلی کا وقت آ گیا ہے۔

مزید : کھیل