رمضان شوگر ملزکیس،نیب کی حمزہ شہباز سے 2 گھنٹے تفتیش ،لیگی رہنما تسلی بخش جوابات نہ دے سکے

رمضان شوگر ملزکیس،نیب کی حمزہ شہباز سے 2 گھنٹے تفتیش ،لیگی رہنما تسلی بخش ...
رمضان شوگر ملزکیس،نیب کی حمزہ شہباز سے 2 گھنٹے تفتیش ،لیگی رہنما تسلی بخش جوابات نہ دے سکے

  


لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)قومی احتساب بیورو(نیب)کی ٹیم نے رمضان شوگر ملزاور آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں زیر حراست اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز سے 2 گھنٹے تفتیش کی تاہم ن لیگ کے رہنما نیب کو سوالات کے تسلی بخش جوابات نہ دے سکے۔

نجی ٹی وی ہم نیوز نے ذرائع کے حوالے سے کہا ہے کہ اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز سے آمدن سے زائد اثاثہ جات اور کمپنیز سے متعلق سوالات کئے گئے،حمزہ سے رمضان شوگر ملز کے بینک اکاوَنٹس اور شیئرزہولڈر سے متعلق پوچھا گیا،نیب حمزہ شہباز سے سوال کیا کہ رمضان شوگر مل کب اور کیسے خریدی؟نیب نے سوال کیا کہ پانی کے اخراج کیلئے ای پی اے اور ایری گیشن ڈیپارٹمنٹ کے قوانین کو فالو کیا؟حمزہ سے سوال کیا گیا کہ رمضان شوگر مل اور شریف ڈیری فارمز نالہ بننے سے قبل فضلے کو کہاں ٹھکانے لگاتے تھے؟رمضان شوگر مل اور شریف ڈیری فارمز نے نالے میں فضلہ ڈالنا کیوں شروع کیا؟

حمزہ شہباز نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ بطور چیف ایگزیکٹو میں نے رمضان شوگرمل کا دورہ بہت کم کیا،میں ہیڈ آفس میں بیٹھتا تھا جو لاہور میں ہے، حمزہ شہباز نے کہا کہ فیکٹری کے ٹیکنیکل معاملات ایڈمنسٹریشن اورمتعلقہ افراد دیکھتے تھے،ٹیکنیکل معاملات کا ماہر نہیں ،سوالات کے جوابات نہیں دے سکتا،اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ آپ کے سوالات ماحولیاتی قوانین سے متعلق ہیں جو نیب کی حدود میں نہیں۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور