شہباز شریف نے پنجاب میں 45ارب روپیہ صرف ذاتی تشہیر پر خرچ کیا :فردوس عاشق اعوان

شہباز شریف نے پنجاب میں 45ارب روپیہ صرف ذاتی تشہیر پر خرچ کیا :فردوس عاشق ...
شہباز شریف نے پنجاب میں 45ارب روپیہ صرف ذاتی تشہیر پر خرچ کیا :فردوس عاشق اعوان

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہاہے کہ شہباز شریف نے 45ارب روپیہ پنجاب میں صرف ذاتی تشہیر پر خرچ کیا ، وزیر اعظم عمران خان نے بنی گالا کے اندر جو حفاظتی دیوار بنائی ہے ، وہ اپنے پیسے سے بنائی ہے ، ، حکومت کو دباﺅ میں لانے کیلئے پارلیمنٹ کو یرغمال بناکر کہا جارہاہے کہ ہم بجٹ پاس نہیں ہونے دیں گے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے فردوس عاشق اعوان نے کہاہے کہ شہباز شریف نے 45ارب روپیہ پنجاب میں صرف ذاتی تشہیر پر خرچ کیا ، قوم کو زہر کے ٹیکے لگا کر گئے اور آج کہہ رہے ہیں کہ قوم بدحال ہے ۔انہوں نے کہا کہ شہباز شریف ہیلی کاپٹر ہوتے ہوئے اپنے وزیر اعظم کے بھائی کے جہاز پر سیر و تفریح کرتے رہے اور ان کے بچے بھی اس جہاز سے مستفید ہوتے رہے ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نواز شریف جب جنرل اسمبلی میں گئے تو ساتھ اپنی بیٹی اور نواسی کوبھی لیکر گئے اور آج اس حکومت کو اصلاح کا درس دے رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان نے بنی گالا کے اندر جو حفاظتی دیوار بنائی ہے ، وہ اپنے پیسے سے بنائی ہے ، اس کے لئے حکومت کا ایک پیسہ بھی نہیں لیا گیا لیکن یہاں ایک پورا شاہی خاندان سرکاری خرچ پر پل رہا تھا ، آج پنجاب حکومت تنکا تنکا اکٹھا کرکے ، اس کی عیاشیوں کی قیمت ادا کررہی ہے ، کابینہ میں بتایا گیاہے کہ سیاسی قیدی کسے کہتے ہیں اور مجرموں کی حیثیت کیا ہے ؟ ان کا کہنا تھا کہ جو لوگ کرپشن میں قید ہیں، وہ سیاسی قیدی کا لیبل لگاکر قوم کی آنکھوں میں دھول جھونک رہے ہیں ، ایک چوری اور اوپر سے سینہ زور ی کی جارہی ہے ، حکومت کو دباﺅ میں لانے کیلئے پارلیمنٹ کو یرغمال بناکر کہا جارہاہے کہ ہم بجٹ پاس نہیں ہونے دیں گے ، آپ کون ہوتے ہیں بجٹ پاس نہ ہونے دینے والے ۔ ان کا کہنا تھا کہ بجٹ کا حکومت سے تعلق نہیں ، اس سے قوم کا مفاد جڑا ہواہے ، پارلیمنٹ میں سپیکر کویرغمال بناکر پروڈکشن کا اظہار کیا جاتارہاہے ، آج کا بینہ میں یہ فیصلہ ہواہے کہ ہم نے معاشرتی رویوں کو بدلناہے ، بدقسمتی سے اس معاشرے میں جس طرح جرم کو پیش کیا جاتا ہے ، اس معاملے کوختم کرنے کیلئے ایک وزیر کوذمہ داری دی گئی ہے کہ جس طرح مجرموں کوجو پولیس پروٹیکشن میں لایا جارہاہے اور جس طرح وہ وکٹری کے نشانات بنا بنا کر آتے ہیں، اس عمل کی حوصلہ شکنی کی جائیگی ۔

فردوس عاشق اعوان نے کہاکہ وزیر اعظم پر انگلیاں اٹھانے والوں کو آنکھیں نیچی رکھنی چاہئے ، سابق وزیر اعظم چادر سے زیادہ پاﺅ ں پھیلاتے رہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم نے کابینہ کو بتایا ہے کہ وہ ستمبر میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں جارہے ہیں جہاں صر ف عمر ان خان اور وزیر خارجہ جائیں گے اور وہ سیون سٹار ہوٹل میں قیام نہیں کریں گے بلکہ سپیکر ہاﺅس میں قیام کریں گے ، اس طرح قوم کا لاکھوں ڈالر بچایا جائیگا ۔ یہ بات بھی کابینہ میں تفصیل سے ڈسکس کی گئی ہے کہ وزیر اعظم نے اعلان کیا تھا کہ وہ جتنے سرکاری ریسٹ ہاﺅسز ہیں ، ان کوکمرشلائز کیا جائے ، کابینہ کو بتایا گیا ہے کہ 150ریسٹ ہاﺅسز کو کمرشلائز کیا جارہاہے ۔ انہوں نے کہا کہ فیصلہ کیاہے کہ ملک کی سمت تبدیل کرنی ہے ،سپیکر ہاﺅس ، گورنر ہاﺅس نتھیا گلی کوبھی عوام مفاد میں کھولا جارہا ہے ، اب وہاں عام شہری بھی اگر افورڈ کرسکتے ہیں تو ادائیگی کرکے وہاں قیام کرسکیں گے ۔ ان کا کہناتھا کہ سپیکر سیاسی قیدی اور کرمینل میں فرق واضح کریں ، سپیکر سندھ اسمبلی کو بھی نیب نے پکڑاہے ، ان سے استعفیٰ کیوں نہیں مانگتے؟ سپیکر سندھ اسمبلی کو توفیق نہیں ہورہی کہ وہ استعفیٰ نہیں دے رہے ۔

مزید : اہم خبریں /قومی