ہانگ کانگ میں 20 لاکھ سے زائد لوگوں کا احتجاج، لیکن ایسے میں ایمبولینس نے گزرنا تھا تو لوگوں نے کیا کیا؟ دیکھ کر آپ بھی کہیں گے یہ ہوتی ہیں زندہ قومیں

ہانگ کانگ میں 20 لاکھ سے زائد لوگوں کا احتجاج، لیکن ایسے میں ایمبولینس نے ...
ہانگ کانگ میں 20 لاکھ سے زائد لوگوں کا احتجاج، لیکن ایسے میں ایمبولینس نے گزرنا تھا تو لوگوں نے کیا کیا؟ دیکھ کر آپ بھی کہیں گے یہ ہوتی ہیں زندہ قومیں

  

ہانگ کانگ(مانیٹرنگ ڈیسک) ہانگ کانگ میں گزشتہ روز 20لاکھ سے زائد لوگ احتجاج کے لیے سڑکوں پر تھے۔اس دوران سڑکوں پر تل دھرنے کی جگہ نہیں تھی ، ٹریفک گزرنے کا تو سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ ایسے میں ایک ایمبولینس آگئی جسے مظاہرین کے درمیان میں سے گزرنا تھا۔ ایسے میں ان لوگوں نے ایسا کام کر ڈالا کہ دیکھ کر آپ بے ساختہ کہہ اٹھیں گے کہ یہ ہوتی ہیں زندہ قومیں۔ میل آن لائن کے مطابق جونہی ایک طرف سے ایمبولینس آئی اور اس کا سائرن سنائی دیا۔ لوگوں نے تیزی کے ساتھ دونوں اطراف میں ہٹ کر درمیان میں راستہ بنانا شروع کر دیا، راستہ بنتاجا رہا تھا اور ایمبولینس گزرتی جا رہی تھی اور پیچھے سے واپس لوگوں کا ٹھاٹھیں مارتا سمندر ایک ہو رہا تھا۔

یہ منظر ایسے ہی تھا جیسے موسیٰ علیہ السلام نے بحیرہ احمر کے پانی کو درمیان میں سے کاٹ کر راستہ بنایا تھا۔ اس واقعے کی ویڈیو انٹرنیٹ پر بہت وائرل ہو رہی ہے اور ہزاروں کی تعداد میں انٹرنیٹ صارفین ہانگ کانگ کے شہریوں کے اس طرز عمل کی ستائش کر رہے ہیں۔ واضح رہے کہ ہانگ کانگ میں شہری ایک نئے منظور کیے جانے والے قانون کے خلاف احتجاج کر رہے ہیں۔ اس قانون کے تحت ہانگ کانگ میں جرم کرنے والے افراد کو ٹرائیل کے لیے چین منتقل کیا جائے گا اور ان پر ہانگ کانگ کی بجائے چین میں مقدمات چلائے جائیں گے۔ شہری اس قانون کو واپس لینے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ہانگ کانگ کے لوگوں کے ٹرائیل وہیں ہونے چاہئیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -