سندھ میٹیاری سے ننکانہ تک ڈائریکٹ کرنٹ ٹرانسمیشن لائن بچھانے کیخلاف دائر درخواست پرمدعاعلیہان بحث کیلئے طلب

  سندھ میٹیاری سے ننکانہ تک ڈائریکٹ کرنٹ ٹرانسمیشن لائن بچھانے کیخلاف دائر ...

  

لاہور(نامہ نگار)لاہور ہائیکورٹ نے سندھ میٹیاری سے ننکانہ صاحب تک ڈائریکٹ کرنٹ ٹرانسمیشن لائن بچھانے کے خلاف دائر درخواست پر تحفظ ماحولیات ایجنسی، این ٹی ڈی سی، نیپرا، سیکرٹری صحت، واپڈا سمیت مدعاعلیہان کو 2 جولائی کو بحث کے لئے طلب کر لیاہے۔مس جسٹس عائشہ اے ملک نے عائشہ وارثی کی درخواست پر سماعت کی،درخواست گزار کی طرف سے آمنہ وارثی ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ سندھ مٹیاری سے ننکانہ صاحب تک 878 کلو میٹر لمبی ڈائریکٹ کرنٹ بجلی کی ٹرانسمیشن لائن بچھائی جا رہی ہے۔ڈائریکٹ کرنٹ بجلی ٹرانسمیشن لائن بچھانے کیلئے وفاقی اور صوبائی تحفظ ماحولیات ایجنسی منظوری نہیں لی گئی،محکمہ صحت مٹیاری سے ننکانہ صاحب تک بجلی ٹرانسمیشن لائن بچھانے پر انسانوں پر مضر اثرات کے خدشات کا اظہار کر چکا ہے۔ فصلوں، مٹی، پانی اور ماحول پر مضر اثرات مرتب ہوں گے، ٹرانسمیشن لائن بچھانے کا ٹھیکہ بھی پاک مٹیاری-لاہور ٹرانسمیشن کمپنی کو غیر قانونی طور پر دیا گیا ہے۔

ٹرانسمیشن لائن

مزید :

صفحہ آخر -