حکومت بڑے سٹورز کو 24گھنٹے کھولنے کی اجازت دے،رانا اختر محمود

حکومت بڑے سٹورز کو 24گھنٹے کھولنے کی اجازت دے،رانا اختر محمود

  

لاہور(انٹرویو: دیبا مرزا:تصاویر ندیم احمد) ریلیف اور ٹیکس فری بجٹ کے نام پر کاروباری طبقہ کو مزید مشکلا ت کا سامنا کرنا پڑے گا۔لاک ڈاؤن کی صورت میں کاروباری طبقہ کو جن پریشا نیو ں کا سامنا ہے حکو مت کو اس حوالے سے موثرحکمت عملی اپنا نے کی ضرورت ہے،حکو مت کو چاہیے کہ وہ بڑے سٹورز کو 24گھنٹے کھو لنے کی اجازت دے تاکہ عوام با آسا نی خریداری کر سکیں اور سٹورز انتظا میہ بھی ایس او پیز پر عمل کروا سکے۔حا لیہ بجٹ میں صنعت وتجارت کو نظرانداز کرنے سے بزنس کمیو نٹی کی مشکلات میں اضا فہ ہو گاان خیا لات کااظہا رمسلم لیگ(ن) کے رہنما رانا اختر محمود نے ”روزنا مہ پاکستان“ کو انٹرویو دیتے ہوئے کیا۔ انہو ں نے کہا کہ حا لیہ بجٹ نے عوام کو بالکل ما یوس کر دیا ہے سمجھ نہیں آتا کہ آخر حکو مت کرنا کیا چا ہتی ہے۔انہو ں نے کہا کہ عوام کو امید تھی کہ اتنی مہنگا ئی کے بعد حکو مت عوام دوست بجٹ پیش کرے گی لیکن مو جودہ بجٹ نے عوام کی امیدوں پر پا نی پھیر دیا ہے۔انہو ں نے کہا کہ بجٹ میں بہت سے اہم شعبو ں کو بالکل نظرانداز کیا گیا ہے، نئے ٹیکس نہ لگا نا اور دوسری طرف پہلے سے موجود ٹیکسوں میں اضا فہ کر نا سراسر زیا دتی ہے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -