کورونا وائرس کے باعث بیروزگاری میں اضافہ ہوا،جاوید قصوری

کورونا وائرس کے باعث بیروزگاری میں اضافہ ہوا،جاوید قصوری

  

لاہور (سٹی رپورٹر)امیرجماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب و صدر ملی یکجہتی کونسل پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری نے کہاہے کہ کورونا وائرس کے باعث پنجاب بھر میں 60لاکھ افراد بے روزگار اور 5ارب ڈالر کا معاشی نقصان ہوچکا ہے۔ غربت کی شرح 24.3سے بڑھ کر 58.6فیصد تک اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔

تحریک انصاف کی تبدیلی کا کھوکھلا نعرہ بے نقاب ہوچکا ہے۔لوگوں کے صبر کا پیمانہ لبریز ہو گیا ہے، عوام کو جاہل کہنے والوں کے دن گنے جاچکے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز مختلف پروگرامات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ کورونا پھیلانے کی ذمہ دار خود حکومت ہے۔ بروقت اقدامات نہ کرکے مجرمانہ غفلت کا ارتکاب کیا گیا ہے۔ حکمران اپنی نا کامیوں کا سارا ملبہ عوام پر ڈال کر بری الذمہ ہونا چاہتے ہیں۔ احتیاطی تدابیر کے ساتھ کورونا سے بچنا ممکن ہے مگر ضرورت اس امر کی ہے کہ حکومت متعین ایس او پیز پر عمل در آمد کروانے کے لیے سنجیدگی کا مظاہرہ کرے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکمرانوں کی کارکردگی کا اندازہ اس بات سے بخوبی لگایا جاسکتا ہے کہ وفاقی حکومت کے مجموعی قرضے 343کھرب 14ارب کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکے ہیں۔ ایک سال میں قرض کے بوجھ میں 6ہزار 235ارب روپ کا ریکارڈ اضافہ ہوا۔ حکومت نے اوسطاً ہر ماہ 520ارب روپے کا قرضہ حاصل کیا ہے۔ اتنی بڑی تعداد میں حاصل کیا جانے والا قرضہ کہا ں خرچ ہو رہا ہے۔؟ محمد جاوید قصوری نے اس حوالے سے مزید کہا کہ کرونا مریضوں کو پرائیویٹ ہسپتال دونوں ہاتھوں سے لوٹنے میں مصروف ہیں۔ پلازمہ کے نام پر خرید و فروخت کی جارہی ہے جبکہ حکومت اس پر گرفت کرنے میں مکمل ناکام نظر آتی ہے۔ سرکاری ہسپتالوں میں وینٹی لیٹر ز کے بعد آکسیجن سلنڈر کی قلت سے مسائل میں اضافہ ہو رہا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -