گوجرانوالہ، چڑیا گھر اراضی قبضہ کیس، میٹر وپولیٹن کارپوریشن کے 3افسر گرفتار   

گوجرانوالہ، چڑیا گھر اراضی قبضہ کیس، میٹر وپولیٹن کارپوریشن کے 3افسر ...

  

گوجرانوالہ(بیورورپورٹ) اینٹی کرپشن گوجرانوالہ نے چڑیا گھر اراضی پر قبضہ کیس میں پوچھ گچھ کیلئے میٹروپولیٹن کارپوریشن کے تین افسران کو گرفتارکر لیا، ان میں لینڈ سپرنٹنڈنٹ عارف محمود بٹ، سپرنٹنڈنٹ سروسز شہزاد کھوکھر اور انکروچمنٹ انسپکٹر زبیر بٹ شامل ہیں بتایا جاتا ہے کہ اینٹی کرپشن حکام نے چڑیا گھر کی اربوں روپے کی سرکاری اراضی پر قبضہ کے حوالے سے مقدمہ درج کر رکھا ہے اور اس مقدمہ میں نندی پور ٹاؤن میں ماضی میں تعینات مزید سینئر افسران کی بھی گرفتاری کا امکان ہے،چڑیا گھر اراضی کیس میں کئی سیاسی شخصیات کے نام بھی زیر تفتیش ہیں، ذرائع کے مطابق پندرہ سال قبل چڑیا گھر کیلئے مختص اربوں روپے کی اراضی پر مبینہ ملی بھگت کے ذریعے اس وقت کے کارپوریشن کے افسران نے پرائیویٹ افراد کا قبضہ کروایا اور بااثر قبضہ مافیا نے سرکاری اراضی پر تعمیرات قائم کر لیں اور باقاعدہ لوگوں کو سرکاری اراضی کے پلاٹ بنا کر فروخت بھی کرنا شروع کر دئیے بعض صنعت کاروں نے اس اراضی پر اپنی فیکٹریاں اور کارخانے بھی بنا لئے تا ہم موجودہ حکومت نے قبضہ مافیا کے خلاف کارروائی کا حکم دیا جس پر چڑیا گھر کی اراضی کو قبضہ گروپوں سے واگذار کروانے کیلئے مسلسل کئی روز تک آپریشن ہوتا رہا،۔ اینٹی کرپشن ذرائع نے رابطہ پر اس حوالے سے کار پوریشن کے تین افسران کی گرفتاری کی تصدیق کرتے ہوئے مزید کچھ بتانے سے گریز کیا ہے اور کہا ہے کہ ابھی اس معاملے کی تفتیش ہو رہی ہے۔ مذکورہ کاروائیاں ریجنل ڈائریکٹر اینٹی کرپشن ذوہیب مشتاق بلوچ کی خصوصی ہدایت پر کی گئی ہیں۔

مزید :

علاقائی -