ماضی میں برسر اقتدار سیاسی قیادت نے عوام کی خدمت نہیں کی: وزیراعظم

ماضی میں برسر اقتدار سیاسی قیادت نے عوام کی خدمت نہیں کی: وزیراعظم

  

کراچی/لاڑکانہ(این این آئی،آن لائن)وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ماضی میں اقتدار میں رہنے والی سیاسی قیادت نے عوامی خدمت نہیں کی، انہوں نے صرف اپنی ذاتی مفاد کی خاطر اقتدار کا استعمال کیا۔ پی ٹی آئی اور اتحادی جماعتوں کا مشترکہ ایجنڈا کرپشن کا خاتمہ، غربت میں کمی اور عوامی خدمت ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز گورنر ہاؤس سندھ میں اتحادی جماعتوں کے وفد سے ملاقات میں کیا۔وفد میں وسیم اختر، کنور نوید، محترمہ کشور زہرہ، فردوس شمیم نقوی، حلیم عادل شیخ، سید آفریدی، اشرف قریشی، ڈاکٹر ارباب غلام رحیم، عرفان مروت،عارف مصطفی جتوئی، سردار عبدالرحیم، حسنین مرزا شامل تھے،اس موقع پرگورنر سندھ عمران اسماعیل، وزیر نجکاری محمد میاں سومرو، وزیر بحری امور سید علی زیدی بھی موجود تھے۔۔وزیر اعظم نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ملک سے کرپشن کا خاتمہ، غربت میں کمی اور عوامی خدمت کے ضمن میں وفاقی حکومت تمام صوبوں کے ساتھ ہر ممکن تعاون کررہی ہے۔انہوں نے کہا کہ انتظامی اصلاحات اور نچلی سطح پر اختیارات کی منتقلی سے حقیقی ترقی ممکن ہو سکے گی۔اتحادی جماعتوں کے ممبران نے صوبہ سندھ میں ترقیاتی کاموں اور انتظامی اصلاحات کے حوالے سے تجاویز وزیراعظم کو پیش کیں۔دریں اثنا پی ٹی آئی کے ممبران سندھ اسمبلی نے وزیراعظم سے ملاقات کی،وزیراعظم سے ملاقات کرنے والے ممبران صوبائی اسمبلی میں عمر عماری، ڈاکٹر سید عمران علی شاہ، ارسلان تاج حسین، بلال احمد، سید فردوس شمیم نقوی، حلیم عادل شیخ، جمال الدین صدیقی، کریم بخش گبول، محمد علی عزیز، میر رمضان، شہزاد قریشی، ملک شہزاد اعوان، ربستان خان، سید احمد، شاہ نواز جدون، محمد اسلم ابرو، شہریار خان، عدیل احمد، راجہ اظہر خان، ڈاکٹر سنجے گنگوانی، طاہرہ دعا بھٹو، سدرہ عمران، ڈاکٹر سیما ضیااور رابعہ اظفر شامل تھے۔اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ عوامی خدمت پی ٹی آئی حکومت کا اولین مشن ہے۔ انہوں نے اراکین کو ہدایت کی کہ وہ اپنے متعلقہ حلقوں میں عوامی مسائل کاحل یقینی بنانے میں متحرک کردار ادا کریں۔ اراکین اسمبلی نے وفاق اور صوبے کے درمیان روابط کو مزید مستحکم کرنے کے لیے تجاویز پیش کیں۔بعدازاں وزیراعظم عمران خان نے لاڑکانہ میں احساس ایمرجنسی کیش ڈسٹریبوشن سنٹر کا دورہ کیا۔گورنر سندھ عمران اسماعیل اور معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر بھی وزیرِ اعظم کے ہمراہ تھے۔ اس موقع پر معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے وزیرِ اعظم کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ احساس ایمرجنسی کیش پروگرام کے تحت سندھ میں 60 ارب روپے تقسیم کیے جا رہے ہیں جبکہ وزیراعظم کی ہدایت کے مطابق احساس کیش پروگرام میں سندھ کا حصہ 22 فیصد سے بڑھا کر 31 فیصد کیا گیا ہے تاکہ وہ تمام خاندان مستفید ہو سکیں جو مستحق اور ضرورت مند ہیں۔وزیر اعظم نے احساس کیش سنٹر پر موجود مزدوروں، ریڑھی والوں اور دیہاڑی دار افراد سے بات چیت بھی کی۔سنٹر پر موجود ریڑھی والوں نے وزیرِ اعظم کو بتایا کہ ان کو ریڑھی لگانے اور روزگار کمانے کی اجازت نہیں دی جاتی جس کے نتیجے میں ان کو اور ان کے خاندانوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔ وزیرِ اعظم نے اس امر پر ناپسندیدگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ریڑھی لگا کر اپنا اور اپنے بچوں کا پیٹ پالنے والے محنت کشوں کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کی روش نہایت افسوس ناک ہے۔ انہوں نے ہدایت کی کہ محنت کش ریڑھی والوں کی راہ میں کوئی رکاوٹ نہ ڈالی جائے تاکہ وہ اپنا روزگار کما سکیں۔

وزیراعظم عمران خان

مزید :

صفحہ اول -