شیر گڑھ،تنظیم اساتذہ ضلع مردان کی جانب سے وفاقی بجٹ مسترد

شیر گڑھ،تنظیم اساتذہ ضلع مردان کی جانب سے وفاقی بجٹ مسترد

  

شیرگڑھ (نامہ نگار) تنظیم اساتذہ ضلع مردان نے وفاقی بجٹ مسترد کردیا پاکستان کی تاریخ میں پہلی بجٹ ہے جس میں غریب سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ نہ کیا گیا جبکہ ارکان اسمبلی،سینٹ کے ارکان اور وزراء کی تنخواہوں میں 300فیصد اضافہ کر دیا گیا ہے تنظیم اساتذہ 19جون کے احتجاج میں بھر پور شرکت کرے گا ان خیالات کا اظہار تنظیم اساتذہ ضلع مردان کے صدر اختر حسین نے اپنے ایک اخبار ی بیان میں کیا انہوں نے کہا کہ سرکاری ملازمین ملک کی ترقی میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے اور ہر سال سرکاری ملازمین کی تنخواہوں معمولی اضافہ کیا جاتا ہے جو کہ اونٹ کے منہ میں زیرے کے برابر ہوتا ہیں تحریک انصاف کے دوسالہ حکومت میں مہنگائی 300فیصد بڑھ گئی ہے جس کا اعتراف کرتے ہوئے حکومت نے اپنے وزراء،ارکان اسمبلی اور سینٹ کے ارکان کے تنخواہوں میں 300فیصد اضافہ کردیا جبکہ مہنگائی کی چکی میں پسی ہوئی غریب سرکاری ملازمین نے سالانہ بجٹ سے امیدیں وابستہ کر رکھی تھی کہ بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں خاطر خواہ اضافہ کیا جائیگا لیکن حکومت نے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ نہ کرکے دو سال سے ریلیف کے منتظر سرکاری ملازمین کے امیدوں پر پانی پھیر دیا انہوں نے مطالبہ کیا کہ فوری طور پر مہنگائی کے تناسب سے صوبائی حکومت بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 100فیصد اضافہ کیا جائے انہوں نے کہا کہ19جون کو پشاور میں احتاجی جلسہ میں تنظیم اساتذہ ہر اول دستے کا کردار ادا کرے گا

مزید :

پشاورصفحہ آخر -