ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس ،انسداددہشتگردی عدالت نے ملزموں کو عمر قید کی سزاسنادی

ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس ،انسداددہشتگردی عدالت نے ملزموں کو عمر قید کی ...
ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس ،انسداددہشتگردی عدالت نے ملزموں کو عمر قید کی سزاسنادی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)انسداددہشتگردی عدالت اسلام آباد نے ڈاکٹرعمران فاروق قتل کیس میں ملزموں کو عمر قید کی سزا سنا دی ،ملزموں میں خالد شمیم، محسن علی اور معظم علی شامل ہیں۔

نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق انسداددہشتگردی عدالت نے ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس کامحفوظ فیصلہ سنا دیا،انسداددہشتگردی عدالت کے جج شارخ ارجمندنے فیصلہ سنایا،عدالت نے گرفتار ملزموں خالد شمیم، محسن علی اور معظم علی کو سزائے موت سزا دی،عدالت نے مفرور 4ملزمان بانی متحدہ،محمدانور،افتخارحسین اورکاشف کامران کے دائمی وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں کہاگیا ہے کہ ایف آئی اے اپنا مقدمہ ثابت کرنے میں کامیاب ہوگیا ہے،عدالت نے تینوں ملزمان کو 10،10 لاکھ روپے معاوضہ مقتول کی اہلیہ اداکرنے کاحکم دیدیا۔

یا درہے کہ ڈاکٹر عمران فاروق پر16 ستمبر 2010 کو لندن میں ان کی رہائش گاہ کے قریب چاقو اور اینٹوں سے حملہ کرکے قتل کردیا گیا تھا۔ پانچ دسمبر 2015 کو ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کیا گیا اور دو مئی دو ہزار اٹھارہ کو فرد جرم عائد کی گئی۔ ملزمان نے سات جنوری دوہزار سولہ کو مجسٹریٹ کے روبرو اقبال جرم کیا اور ایف آئی اے نے پانچ بار ملزمان کا جسمانی ریمانڈ حاصل کیا۔کیس میں استغاثہ کے 29 گواہوں کے بیانات ریکارڈ کیے گئے تھے۔عدالت نے کیس کی سماعت مکمل کر کے 21 مئی کو فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -علاقائی -اسلام آباد -