صدارتی ریفرنس:احتساب کے نام پرتباہی ہورہی ہے،جسٹس عمر عطابندیال

صدارتی ریفرنس:احتساب کے نام پرتباہی ہورہی ہے،جسٹس عمر عطابندیال
صدارتی ریفرنس:احتساب کے نام پرتباہی ہورہی ہے،جسٹس عمر عطابندیال

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ میں صدارتی ریفرنس کیخلاف جسٹس قاضی فائزعیسیٰ کی درخواست پر جسٹس عمرعطابندیال نے کہاکہ افسوس ہے اس میں ہمارے ادارے کواستعمال کیاگیا، احتساب کے نام پرتباہی ہورہی ہے۔

نجی ٹی وی دنیا نیوزکے مطابق سپریم کورٹ صدارتی ریفرنس کیخلاف جسٹس قاضی فائزعیسیٰ کی درخواست پر سماعت جاری ہے ،جسٹس عمر عطابندیال کی سربراہی میں 10 رکنی لارجر بنچ سماعت کررہا ہے،جسٹس عمرعطابندیال نے کہاکہ افسوس ہے اس میں ہمارے ادارے کواستعمال کیاگیا، احتساب کے نام پرتباہی ہورہی ہے،جسٹس مقبول باقر نے کہاکہ میں اپنی تفصیلات آرام سے نہیں لے سکتا تو ایک جج کی تفصیالت وحیدڈوگر کے پاس کیسے آئیں ،تمام کارروائی کے بعدڈوگر کو لاکر کھڑا کردیاگیا ،احتساب کے نام پرجوتباہی ہو رہی ہے اس پربھی لکھیں گے۔

جسٹس منصور علی شاہ نے کہاکہ وزیراعظم کے پاس نئی وزارت بنانے کااختیار ہے،وزیراعظم کے پاس نئی ایجنسی بنانے کااختیارکدھر ہے؟۔ فروغ نسیم نے کہا کہ وزیراعظم کوکوئی بھی چیزکابینہ کو بھیجنے کااختیارہے۔

جسٹس یحییٰ آفریدی نے استفسار کیاکہ اے آریو وفاقی حکومت کیسے ہوگئی؟ ،اے آریونے ایف بی آر سے ٹیکس سے متعلق سوال کیسے کیا،جسٹس مقبول باقر نے کہاکہ وزیراعظم کے اختیارات کسی قانون کے مطابق ہوں گے۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -