چینی فوجیوں نے گلوان وادی میں جھڑپوں کے دوران بھارتی فوجیوں کو کیا چیز مار کر ہلاک کیا ؟ بھارتی صحافی نے تصویر جاری کرتے ہوئے بڑا دعویٰ کر دیا

چینی فوجیوں نے گلوان وادی میں جھڑپوں کے دوران بھارتی فوجیوں کو کیا چیز مار کر ...
چینی فوجیوں نے گلوان وادی میں جھڑپوں کے دوران بھارتی فوجیوں کو کیا چیز مار کر ہلاک کیا ؟ بھارتی صحافی نے تصویر جاری کرتے ہوئے بڑا دعویٰ کر دیا

  

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن )چند دن قبل گلوان وادی میں چینی فوج اور بھارتی فوج کے درمیان چھڑپیں دیکھنے میں آئی جس دوران بھارت کے کرنل سمیت 20 فوجی مارے گئے اور کشیدگی شدت اختیار کر گئی۔

بھارتی میڈیا کا کہناتھا کہ چینی فوجیوں کی جانب سے 36 بھارتی فوجیوں کو قید بھی کیا گیا تاہم بیشتر کو رہا کر دیا گیا جبکہ ایک میجر اور کپتان کو قید میں رکھا گیا ہے جن کی رہائی کیلئے مذاکرات جاری ہیں لیکن اب بھارتی صحافی نے ایک اور بڑا دعویٰ کر دیاہے ۔

دنیا بھر کے میڈیا میں یہ خبریں عام تھیں کہ یہ لڑائی ہتھیاروں کے بغیر ہوئی جس دوران بھارت کے بیس فوجی اہلکار مارے گئے تاہم بھارتی صحافی ” اجے شکلا “ نے ٹویٹر پر ایک تصویر جاری ہے اور دعویٰ کیا ہے کہ یہ وہ ہتھیار ہیں جن کے ذریعے ہمارے فوجی ہلاک کیے گئے ۔

صحافی ” اجے شکلا “ کا کہناتھاکہ ” یہ لوہے کے راڈز جن پر کیل نصب ہیں انہیں بھارتی فوجیوں کی جانب سے گلوان وادی سے قبضے میں لیا گیا ہے جہاں چینی اور بھارتی فوجیوں کے درمیان لڑائی ہوئی تھی ،چینی فوجیوں ہمارے سپاہیوں کو ان راڈز کے ذریعے ہلاک کیا ہے ۔“

مزید :

بین الاقوامی -