بھارت سلامتی کونسل کا رکن بن گیا، اس میں پاکستان نے کیا کردار ادا کیا؟ شیریں مزاری نے اپنی ہی حکومت کا پاکستانیوں کیساتھ دھوکہ بے نقاب کردیا

بھارت سلامتی کونسل کا رکن بن گیا، اس میں پاکستان نے کیا کردار ادا کیا؟ شیریں ...
بھارت سلامتی کونسل کا رکن بن گیا، اس میں پاکستان نے کیا کردار ادا کیا؟ شیریں مزاری نے اپنی ہی حکومت کا پاکستانیوں کیساتھ دھوکہ بے نقاب کردیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارت سلامتی کونسل کی غیر مستقل نشست پر رکن منتخب ہو گیا، اقوام متحدہ کے 193 میں سے 184 ممالک نے ووٹ دیئے جس کے بعد بھارت یکم جنوری 2021 سے 31 دسمبر 2022 تک کےلئے سلامتی کونسل کا غیر مستقل رکن منتخب ہوا ہےلیکن اس انتخاب میں پاکستان نے کیا کردار ادا کیا؟ انسانی حقوق کی وزیر ڈاکٹر شیریں مزاری نے اپنی ہی تحریک انصاف کی حکومت کا پاکستانیوں کیساتھ دھوکہ بے نقاب کردیا۔

ٹوئٹر پر شیریں مزاری نے لکھا کہ " 17 جون کو بھارت دو سال کے لیے اقوام متحدہ کی سیکیورٹی کونسل کا غیرمستقل رکن منتخب ہوگیا ہے ، 193 میں سے 184 ووٹ حاصل کیے ، جنرل اسمبلی کے رکن آئرلینڈ، میکسیکو ، ناروے نے بھی اپنی ریجنل نشستیں جیتیں"۔

اپنی سلسلہ وار ٹوئیٹس میں انہوں نے مزید بتایا کہ " پاکستان کیلئے سوال ہے کہ ہم نے یہ کیوں یقینی بنایا کہ خطے سے کوئی اور نہ لڑے؟ افریقین نشست پر انتخاب تھا اور بہت پہلے بھارت کی نامزدگی پر ہم کیوں رضامند ہوئے؟ اس میں بھی سب سے پریشان کن چیز انڈیا کو ملنے والے ووٹ ہیں جو اس نے حاصل کیے"۔ 

ان کا مزید کہنا تھا کہ ایسا نہیں ہے کہ آسمان نہیں گرے گا، یہ حقیقت ہے کہ ایک ایسے وقت میں جب بھارت نے غیرقانونی طور پر مقبوضہ کشمیر کا انضمام کیا اور روزانہ کی بنیاد پر چین اور نیپال کے ساتھ تنازعہ کے ساتھ ساتھ پاکستان پر حملے کررہا ہے ، بھارت کو بلا مقابلہ چھوڑ دینا اسے  قانونی جواز دیتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ " اگر چہ مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارت کی یہ تمام حرکات عالمی قوانین اور خود اقوام متحدہ کی قراردادوں کی خلاف ورزی ہیں  ، اسی دوران کینیا اور ڈی جبوتی مطلوبہ ووٹ حاصل نہیں کرسکے ، اس لیے افریقین نشست تاحال خالی ہے "۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -