کورونا وائرس سے بچنے کے لیے 82 سالہ خاتون کے انوکھے ترین لباس نے انٹرنیٹ پر دھوم مچادی

کورونا وائرس سے بچنے کے لیے 82 سالہ خاتون کے انوکھے ترین لباس نے انٹرنیٹ پر ...
کورونا وائرس سے بچنے کے لیے 82 سالہ خاتون کے انوکھے ترین لباس نے انٹرنیٹ پر دھوم مچادی

  

ہوانا(مانیٹرنگ ڈیسک) جزائر غرب الہند کے ملک کیوبا میں ایک 82سالہ خاتون نے کورونا وائرس سے بچنے کے لیے ایسا انتظام کر ڈالا ہے کہ دیکھ کر آدمی دنگ رہ جائے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق اس خاتون کا نام فریڈیا روجاس ہے جو کیوبا کے دارالحکومت ہوانا کی رہائشی ہے۔ اس نے کارڈ بورڈ سے ایک ڈبہ بنایا ہے جسے پہن کر وہ گھر سے باہر نکلتی ہے۔ یہ ڈبہ اوپر سے بند ہے اور گھٹنوں تک جاتا ہے۔ چہرے کی جگہ پر پلاسٹک کا شفاف ٹکڑا لگا ہوا ہے جس کے آرپار دیکھا جا سکتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق فریڈیا کے صرف بازو اس ڈبے سے باہر ہوتے ہیں، جسے آپ فریڈیا کو گھریلو ساختہ حفاظتی لباس بھی کہہ سکتے ہیں۔ اس نے اپنے اس ڈبے پر لکھ رکھا ہے کہ ”میں گھر پر ہوں، تم کہاں ہو؟“فریڈیا نے یہ فقرہ کیوبا کے کورونا وائرس سلوگن ’سٹے ایٹ ہوم‘ پر چست کیا ہے۔ فریڈیا کا کہنا ہے کہ ”میری دو بیٹیاں ہیں اور وہ دونوں امریکہ میں رہتی ہیں۔ یہاں میرے گھر سے باہر کے کام کرنے والا کوئی نہیں ہے چنانچہ مجھے ہی باہر نکلنا پڑتا ہے۔ ایسی صورت میں وائرس سے بچنے کے لیے میں نے یہ ڈبہ تیار کر لیا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -کورونا وائرس -