بنی گالہ کو ریگولرائز کیا جاسکتا ہے تو کراچی کی بستیوں کو کیوں نہیں؟؟؟ ایم کیو ایم نے تجاوزات آپریشن پر اہم سوالات اٹھادیئے

بنی گالہ کو ریگولرائز کیا جاسکتا ہے تو کراچی کی بستیوں کو کیوں نہیں؟؟؟ ایم ...
بنی گالہ کو ریگولرائز کیا جاسکتا ہے تو کراچی کی بستیوں کو کیوں نہیں؟؟؟ ایم کیو ایم نے تجاوزات آپریشن پر اہم سوالات اٹھادیئے

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن ) متحدہ قومی موومنٹ پاکستان (ایم کیو ایم ) کے رہنما عامر خان اور سابق میئر کراچی وسیم اختر نے سپریم کورٹ کے حکم پر تجاوزات کے خلاف ہونے والے آپریشن پر اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ بنی گالہ کو جرمانہ لگا کر ریگولرائز کیا جاسکتا ہے توکراچی کی بستیوں میں رہنے والے شہریوں نے کیا جرم کیا ہے ان پربھی جرمانہ لگا کر ریگولرائز کردیں۔

تفصیلات کے مطابق پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے عامرخان کاکہنا تھا کہ کراچی میٹروپولٹین کارپوریشن (کے ایم سی) کاادارہ کس کے ماتحت ہے، کس نے دکانیں توڑی ہیں،دکانداروں کو متبادل جگہ فراہم کی جانی چاہئے،سہراب گوٹھ، بنارس میں بھی بہت تجاوزات ہیں ان کو کیوں نہیں ختم کرتے ہیں۔

انکا کہنا تھا کہ سندھ حکومت کا سارا زور صرف مہاجر علاقوں پر ہے،شارع فیصل پر موجود تجاوزات کو کیوں نہیں گرایا جارہا۔

اس موقع پرسابق میئر کراچی وسیم نے اختر نے کہا کہ کیا سندھ حکومت کی جانب سے کراچی میں پینے کا پانی مہیا کیا جارہا ہے ، شہر میں ٹرانسپورٹ ہے کیا،سندھ حکومت کیا بنیادی ضروریات پوری کررہی ہے؟؟۔ سندھ حکومت ابھی تک عوام کو بنیادی سہولیات فراہم نہیں کرسکی۔

مزید :

قومی -علاقائی -سندھ -کراچی -