گھر میں گر کر زخمی ہونے والے پی کے میپ کے رہنما عثمان کاکڑ کوما میں چلے گئے

گھر میں گر کر زخمی ہونے والے پی کے میپ کے رہنما عثمان کاکڑ کوما میں چلے گئے
گھر میں گر کر زخمی ہونے والے پی کے میپ کے رہنما عثمان کاکڑ کوما میں چلے گئے

  

کوئٹہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) پشتونخوا ملی عوامی پارٹی (پی کے میپ) کے سینئر رہنما سابق سینیٹر عثمان خان کاکڑ برین ہیمبرج کے بعد کوما میں چلے گئے۔

عثمان خان کاکڑ گزشتہ روز گھر میں گر زخمی ہوئے تھے جس کے  بعد انہیں فوری طور پر ہسپتال لے جایا گیا جہاں ڈاکٹرز نے برین ہیمبرج کی تصدیق کی۔ پارٹی رہنما سابق صوبائی وزیرعبدالرحیم زیارتوال کے مطابق جمعرات کو عثمان کاکڑ کوئٹہ میں واقع اپنے گھر میں تھے جب ان کی دماغ کی شریان پھٹ گئی۔ برین ہیمبرج کے اس حملے کے وہ خود کو نہ سنبھال سکے اور گر کر زخمی ہو گئے۔ انہیں سر پر چوٹ آئی ہے۔

کوئٹہ کے ماہر نیورو سرجنز کی ٹیم نے عثمان کاکڑ کا آپریشن کیا ہے تاہم وہ اب کوما میں جاچکے ہیں۔ انہوں نے آپریشن کے بعد سے اب تک صرف ایک بار پاؤں کو حرکت دی ہے۔ انہیں وینٹی لیٹر پر رکھا گیا ہے۔پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی نے عثمان کاکڑ کی ہسپتال میں جا کر عیادت کی ہے۔ اس موقع کی تصویر سوشل میڈیا پر دعائیہ کلمات کے ساتھ شیئر کی جا رہی ہے۔

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد اور سابق وزیر اعظم نوازشریف عثمان کاکڑ کی علالت پر اظہار غم اور صحت یابی کی دعا کرتے ہوئے اپنے پیغام میں کہا کہ " سینیٹر عثمان کاکڑ بلوچستان کی ایک دلیر، بااصول اور جمہوری آواز ہیں، ان کی علالت کی خبر پر دلی رنج ہوا، عثمان کاکڑ کی صحت یابی کے لئے پوری قوم سے دعا کی خصوصی اپیل کرتا ہوں، اللہ تعالی عثمان کاکڑ کو صحت کاملہ عاجلہ مستمرہ عطا فرمائے۔"

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے اپنے پیغام میں کہا " سینیٹر عثمان کاکڑ صاحب کی علالت کا سن کر بہت فکر ہوئی۔  پاکستان میں کاکڑ صاحب جیسے بہادراور جرات مند سیاستدان بہت کم ہیں۔ اللّہ تعالیٰ کے حضور کاکڑ صاحب کی لمبی زندگی اور جلد صحتیابی کیلیے ہم سب دعاگو ہیں ۔اللّہ انہیں سلامت رکھے۔ آمین"

مزید :

علاقائی -بلوچستان -کوئٹہ -