17سال کی سروس کے بعد پنجاب حکومت نے  ڈی جی ریسکیوپنجاب کی سروس ریگولر کرنے کا حکم جاری کردیا

17سال کی سروس کے بعد پنجاب حکومت نے  ڈی جی ریسکیوپنجاب کی سروس ریگولر کرنے کا ...
17سال کی سروس کے بعد پنجاب حکومت نے  ڈی جی ریسکیوپنجاب کی سروس ریگولر کرنے کا حکم جاری کردیا

  

 لاہور( (ڈیلی پاکستان آن لائن )حکومت پنجاب کی طرف سے  ڈائریکٹر جنرل پنجاب ایمرجنسی سروس ڈاکٹر رضوان نصیر کو17سال پبلک سروس کرنیکے بعد ریگولرائز کرنے کا نوٹیفیکیشن جاری کردیا گیا۔

نوٹیفکیشن کے مطابق ڈی جی ریسکیو کی کی سروسز 17مارچ2021سے گریڈ20میں ریگولرائز کر دی گئی ہیں۔یہ نوٹیفیکیشن پنجاب ایمرجنسی سروس ترمیمی بل 2021-کے مطابق صوبائی کابینہ پنجاب کی منظوری کے بعد جاری کیا گیا۔سروسز ریگولر ہونے کا نوٹیفیکیشن جاری ہونے کے بعد ڈاکٹر رضوان نصیر گزشتہ روز ہیڈ آفس پہنچے تو  ایمرجنسی سروسز ہیڈکواٹرز اور ایمرجنسی سروسزاکیڈمی کے سینئر افسران  اور عملہ نے ڈی جی ریسکیو ڈاکٹررضوان نصیر کا پرتپاک استقبال کیا۔

 ترجمان ریسکیو پنجاب فاروق احمد نے کہا کہ ڈاکٹررضوان نصیر اس خطے میں ایمرجنسی سروسز کے بانی ہیں انہوں نے پاکستان میں پہلی جدید ایمبولینس اور فائر سروس متعارف کروائی۔جب ایسی کوئی سروس موجود ہی نا تھی تو انہوں نے دوسو ریسکیورز اور14ایمبولینسز کیساتھ لاہور سے پنجاب ایمرجنسی سروس کا آغاز کیا جوکہ اب تحصیل سطح پر ریسکیو اسٹیشنوں سازوسامان اور14ہزار ریسکیورز کے ساتھ ایک قابل فخر ادارہ بن چکا ہے جو کہ تمام شہریوں کو بلا تفریق رنگ ونسل ومذہب سروسز فراہم کر رہا ہے۔سب سے پہلے ریسکیوایمبولینس سروس شروع کی گئی جسکی وجہ سے اب تک روڈ ٹریفک حادثات اور دیگر مختلف ایمرجنسیز میں 94لاکھ سے زائد ایمرجنسی متاثرین کوبروقت ریسکیوکیا جا چکا ہے۔2007میں قائم ہونے والی پاکستان کی پہلی جدید فائراینڈ ریسکیو سروس اب تک 1لاکھ 65ہزار سے زائد آتشزدگی کے حادثات پر بروقت رسپانس اور پیشہ وارانہ فائرفائٹنگ کی بدولت 500ارب سے زائد ممکنہ نقصانات کو بھی بچا چکی ہے۔جبکہ پہلی موٹربائیک ریسکیو سروس اب تک 7لاکھ 40ہزار سے زائد حادثات پر 4منٹ کے اوسط رسپانس ٹائم سے ایمرجنسی متاثرین کی مدد کی۔

ترجمان ریسکیو کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر رضوان نصیر نے  مریضوں کی منتقلی کا چیلنج قبول کیااور محکمہ صحت سے ایمبولیسز لیکر باقاعدہ سروسز کی فراہمی کو یقینی بناتے ہوئے اب تک  نو لاکھ سے زائد مریضوں کو بہترین سروسز فراہم کیں۔ڈاکٹررضوان نصیر نے ایمرجنسی سروسزاکیڈمی قائم کی تاکہ حادثات وسانحات سے نبردآزما ہونے کیلئے پروفیشنل ریسکیورز کی جدید خطوط پر تربیت کی جاسکے جہاں پاکستان بھر سے 20ہزار سے زائد ایمرجنسی پرسنلز کو تربیت دی جاچکی ہے۔ترجمان ریسکیو نے مزید کہا کہ ڈاکٹررضوان نصیر کی قیادت میں ایمرجنسی سروسز کی پاکستان ریسکیو ٹیم کو اقوام متحدہ سے جنوبی ایشیاء میں پہلی سرچ اینڈ ریسکیو ٹیم بننے کا اعزاز حاصل ہوا جو کہ پاکستان کیلئے بھی اعزاز ہے۔

مزید :

قومی -