جھیل سے ملنے والے پراسرار جہاز کا معمہ حل ہوگیا

جھیل سے ملنے والے پراسرار جہاز کا معمہ حل ہوگیا
جھیل سے ملنے والے پراسرار جہاز کا معمہ حل ہوگیا
سورس: Pixabay

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی ریاست کیلیفورنیا میں گزشتہ دنوں ایک جھیل سے پراسرار طور پر ہوائی جہاز کا ملبہ برآمد ہوا تھا جس کا عقدہ اب وا ہو گیا ہے۔ دی گارڈین کے مطابق ابتدائی طور پر ورکرز نے خیال کیا کہ یہ ہوائی جہاز 1965ء میں تباہ ہونے والا جہاز ہے جس میں پائلٹ اور 3مسافر موت کے منہ میں چلے گئے تھے تاہم تحقیقات میں معلوم ہوا ہے کہ یہ 1986ء میں تباہ ہونے والا ایک جہاز ہے جو اس جھیل میں گر کر غرق ہو گیا تھا۔ 

رپورٹ کے مطابق اس جہاز کا ملبہ ’سی فلور سسٹمز‘ کے ورکرز نے فولسم لیک میں سیکرامینٹو کے قریب دریافت کیا۔ حکام کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ اس ہوائی جہاز کے حادثے میں کوئی ہلاکت نہیں ہوئی تھی اور اس کا ملبہ جھیل سے نہیں نکالا جائے گا بلکہ یہ وہیں رہے گا۔ واضح رہے کہ 1965ء میں تباہ ہونے والے اس ہوائی جہاز کا ملبہ تلاش کرنے کی بارہا کوششیں ہو چکی ہیں تاہم اب تک کامیابی نہیں ہو سکی۔ اسے تلاش کرنے کی آخری کوشش 2014ء میں کی گئی تھی۔وہ جہاز بھی اسی علاقے میں گر کر کہیں غرق آب ہوا تھا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -