سپرے مہم شروع نہ ہو سکی ،ڈینگی اور ملیریا کے بڑے حملے کا خطرہ

سپرے مہم شروع نہ ہو سکی ،ڈینگی اور ملیریا کے بڑے حملے کا خطرہ

  

لاہور(جنرل رپورٹر)صوبائی دارالحکومت میں مچھر مار سپرے شروع نہ ہونے کے باعث شہر لاہور میں مچھروں نے یلغار کر دی ہے اس دفعہ جومچھرنظر آ رہے ہیں وہ اس سے قبل نہیں دیکھے گئے شہریوں کا کہنا ہے مچھروں کی یہ اقسام جو ان دنوں لاہور میں شام ہوتے ہی نظر آتی ہیں اس صورت حال کے باعث شہر لاہور میں ایک دفعہ پھر ڈینگی اور ملیریا کے بڑے حملے کا امکان پیدا ہو گیا ہے جس کی وارننگ صوبائی انسداد ڈینگی کور کمیٹی پہلے ہی دے چکی ہے اس کے باوجود محکمہ صحت اور ضلعی حکومت نے آنکھیں بند کر رکھی ہیں اور تفصیلات کے مطابق انسداد ڈینگی کور کمیٹی نے محکمہ صحت اور ضلعی حکومتوں کو لکھے گئے خطوط میں انکشاف کیا ہے کہ ڈینگی مچھروں کا لاروا جگہ جگہ موجود ہے اور اس کو تلف کرنے کے لیے فروری کے وسط میں مہم شروع کی جانی تھی تاکہ ملیریا اور ڈینگی کے مچھر پیدا نہ ہو سکیں ذرائع کا کہنا ہے کہ ضلعی حکومت اور محکمہ صحت نے مچھروں کا لاروا تلف کرنے کے لیے کوئی خاطر خواہ مہم نہیں چلائی جس کے باعث موسم تبدیل ہوتے ہی لاروے سے مچھر بن چکے ہیں اور ماہرین کا کہنا ہے کہ زیادہ مچھر ملیریا اور ڈینگی کے ہیں اورشہر لاہور مکمل طور پر مچھروں کے نرغے میں ہے شام ہوتے ہی مچھر پارکوں گھروں باغیچوں میں بڑی تعداد میں نمودار ہوتے ہیں مچھروں کے کاٹنے سے بڑی تعداد میں ملیریا اور ڈینگی کے مریض سامنے آنا شروع ہو گئے ہیں تاہم سرکاری ہسپتال والے ایسے کیسز کو چھپا رہے ہیں ذرائع کا کہنا ہے کہ ایسے کیسز شاہدرہ ،باغبان پورہ ،جی ٹی روڈ سے ملحقہ آبادیاں ،چاہ میراں ،بند پار آبادیاں ،مزنگ ،چونگی امر سدھو کے علاقوں سے کیسز سامنے آنا شروع ہو گئے ہیں اس حوالے سے خواجہ سلمان رفیق کا کہنا ہے کہ مچھروں کو تلف کرنے کے لیے سرویلنس مہم شروع ہو چکی ہے اس میں مزید تیزی لائیں گے ای ڈی او اور ٹاؤنوں کے افسروں کو ہدایات جاری کر دی ہیں جہاں ضروری ہوا سپرے کریں گے ہسپتالوں میں ہفتہ صفائی اسی سلسلے کی ایک کڑی تھی۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -