لاڑکانہ کے واقعہ میں ملوث عناصر کو بے نقاب کیا جائے گا ،نثار کھوڑو

لاڑکانہ کے واقعہ میں ملوث عناصر کو بے نقاب کیا جائے گا ،نثار کھوڑو

  

 لاڑکانہ(پاکستا ن نیوز) سندھ کے سینئر وزیر نثار احمد کھوڑو کی صدارت میں سرکٹ ھاﺅس لاڑکانہ میں امن امان کے متعلق اعلیٰ سطحی اجلاس، لاڑکانہ کی انتظامیہ سمیت مختلف مکتبہ فکر کے مذہبی رہنماﺅں کی شرکت۔ پولیس افسران کی سینئر وزیر کو امان کے متعلق بریفنگ۔ لاڑکانہ واقعے کی سازش کو بے نقاب کرنے اور شرپسندنوں کے خلاف بلا تفریک کارروائی کرنے سمیت شہر میں سکیورٹی سخت کرنے کا فیصلہ ، پیر کو سرکٹ ھاﺅس لاڑکانہ میں سندھ کے سینئر وزیر نثار احمد کھڑو کی صدارت میں امن امان کے متعلق اجلاس ہوا جس میں کمشنر، ڈپٹی کمشنر، ڈی آئی جی اور ایس ایس پی لاڑکانہ سمیت مختلف مکتبہ فکر کے مذہبی رہنماﺅں نے شرکت کی۔ اجلاس میں لاڑکانہ میں مبینہ پاک اوراق کی بے حرمتی اور مندر کو نذر آتش کرنے والے واقعات کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے افسوس کا اظہار کیا گیا۔ اجلاس میں پولیس افسران کی جانب سے نثار احمد کھوڑو کو لاڑکانہ میں پیش آنے والے واقعات اور کئے گئے اقدامات سمیت امن امان کے متعلق تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ اس موقع پر ایس ایس پی اور ڈپٹی کمشنر کی سربراہی میں مذہبی رہنماﺅں پر مشتمل کمیٹی تشکیل دینے کی منظوری دی گئی جو کہ ان واقعات کی تحقیقات کرکے جلد رپورٹ پیش کرے گی۔ جب کہ مذہبی رہنماﺅں نے امن امان برقرار رکھنے کے لئے انتظامیہ اور حکومت سے تعاون پر اتفاق کیا۔ اجلاس کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے نثار احمد کھوڑو نے کہا کہ لاڑکانہ واقعہ کی سازش کو بے نقاب کرنے کے ساتھ ساتھ سازش میں ملوث عناصر کو بھی بے نقاب کیا جائے گا اور امن امان کو برقرار رکھنے کے لئے شرپسندوں کے خلاف بلا تفریق کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ واقعہ کے زمہ داروں کے خلاف سخت کاروائی ہونی چاہیے اور امن امان خراب کرنے والوں کے ساتھ سختی سے نمٹا جائیگا۔نثار احمد کھوڑو نے کہا کہ آئندہ ایسے واقعات کے روک تھام کے لئے پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں اور اہلکاروں کے گشت میں اضافہ یقینی بنایا جائیگا اور شہر کے داخلی اور خارجی راستوں پر نگرانی کا عمل تیز کیا جائے گا۔ انہوں نے لاڑکانہ شہر کا مکمل دورہ کیا اور شہر میں سکیورٹی کی صورتحال کا جائزہ لیا اور شہریوں سے بھی ملاقات کی۔ جب کہ وہ متاثرہ مندر اور ھندو دھرم چھالا بھی گئے جہان پر انہوں نے ھندو پنچائت کے رہنماﺅں سے ملاقات کی اور انہیں ہر قسم کے تعاون کا یقین دلایا۔

مزید :

صفحہ آخر -